آئندہ بجٹ میں ،تمباکو نوشی کرنے والوں پر 30سے 50ہزار روپے اضافی ٹیکس لگانے کا فیصلہ

آئندہ بجٹ میں ،تمباکو نوشی کرنے والوں پر 30سے 50ہزار روپے اضافی ٹیکس لگانے کا ...

  

ملتان (نیوز رپورٹر) وفاقی حکومت نے آئندہ مالی سال کے بجٹ میں تمباکو نوشی کرنے والوں پر 30 سے 50 ارب روپے کا اضافی ٹیکس لگانے کا فیصلہ کرلیا ہے۔تفصیلات کے مطابق (بقیہ نمبر24صفحہ12پر )

حکومت نے جانب سے انسداد تمباکو نوشی اور اس کی حوصلہ شکنی کیلئے ٹیکسیشن ریفارمز لانے کا فیصلہ کرلیا ہے ، فیصلہ وزارت قومی صحت،وزارت خزانہ کی مشاورت سے کیاجارہاہے حکومت کی جانب سے انسداد تمباکو کے لئے ٹھوس اقدامات کیے جارہے ہیں جبکہ تمباکو پر سخت ترین ٹیکس اصلاحات کی منظوری بھی دے دی گئی ہے۔ آئندہ بجٹ میں تمباکو نوشی کی روک تھام کیلئے ٹیکس لگایا جائے گا، تمباکو سے منسلک اشیا کی قیمت میں اضافے سے استعمال کی حوصلہ شکنی ہوتی ہے۔ تمباکو نوشی پر ٹیکس سے تیس سے پچاس ارب روپی کا اضافی ریونیو حاصل ہوگا، ٹیکس مد میں حاصل رقم صحت انصاف کارڈ کیلئے استعمال ہو گی۔ذرائع کے مطابق مذکورہ ٹیکس فنانس بل میں شامل کیاجائے گا ، پاکستان میں اموات کی سب سے بڑی وجہ تمباکو نوشی ہے، ایک لاکھ 60 ہزار لوگ تمباکو کے استعمال کے باعث لقمہ اجل بن جاتے ہیں۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -