قومی سلامتی کے اداروں کا دفاع ہمارے آئین کاحصہ ہے،ثوبیہ کمال

  قومی سلامتی کے اداروں کا دفاع ہمارے آئین کاحصہ ہے،ثوبیہ کمال

  

لاہور(پ ر) ممبر قومی اسمبلی و وفاقی پارلیمانی سیکرٹری برائے وزارت امور کشمیر و گلگت بلتستان ثوبیہ کمال خان نے کہاہے کہ قومی سلامتی کے اداروں کا دفاع ہمارے آئین کا حصہ ہے قومی سلامتی کے اداروں کیخلاف بات نہیں کی جا سکتی، پی ٹی ایم کے واقعہ کے حوالے سے فوج اور حکومت ایک پیج پر ہیں،حکومت نے پالیسی دینی ہوتی ہے جبکہ اداروں نے اس پالیسی کے مطابق ایکشن لینا ہے،فوج اور حکومت جدا نہیں، ہمارا کام ہے شرپسندوں کو بے نقاب کرنا ہے جو رہتے یہاں ہیں لیکن زبان دشمن کی بولتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ پختون، پشتون اور پٹھان باعزت اور باوقار لوگ ہیں جو ہمیشہ پاکستان کے دفاع کیلئے اگلی صفوں میں رہے کچھ لوگ انہیں اپنے سیاسی مفاد کیلئے استعمال کرنا چاہتے ہیںجو لوگ ہمارے دشمنوں کی زبان بولتے ہیں ان کو پہچاننا چاہیے،پاکستان کے خلاف کام کرنے والوں کی کسی صورت حمایت نہیں کی جاسکتی۔انہوں نے مزےد کہاکہ محسن داوڑ علی وزیر وہی ارکان ہیں جو ڈرون حملوں کی حمایت کرتے رہے، افغان خفیہ ایجنسیوں سے ان لوگوں کے رابطوں کی تحقیقات کی جائیں، محسن داوڑ اور علی وزیر کیخلاف قانون حرکت میں آئے گا

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -