ناصر حسین شاہ کی اسلام آبادمیں پارٹی کارکنوں پر تشدد کی مذمت

ناصر حسین شاہ کی اسلام آبادمیں پارٹی کارکنوں پر تشدد کی مذمت

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)پیپلز پارٹی کے رہنما اور سینئر صوبائی وزیر برائے ورکس اینڈ سروسز، آبپاشی، جنگلات و جنگلی جیوت اور مذہبی امور سید ناصر حسین شاہ نے اسلام آباد پولیس کی جانب سے کارکنان پر بدترین تشدد، شیلنگ اور گرفتاریوں کی سخت الفاط میں مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ آج تحریک انصاف کی حکومت کی ایماپر اسلام آباد میں پیپلز پارٹی کے کارکنان پر بے رحمانہ تشدداور جبر کی بدترین مثال قائم کی گئی، پیپلز پارٹی کے کارکنان پر لاٹھی چارج کیا گیا۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ پولیس نے پیپلز پارٹی کے بے گناہ کارکنان پر بدترین لاٹھی چارج اور آنسو گیس کی شیلنگ کیا گیا اور درجنوں کارکنان کو حراست میں لے کر نامعلوم مقام پر منتقل کر دیا۔ انھوں نے مزید کہا کہ پ ر امن، نہتے جیالوں اور منتخب ایم این ایز، سینیٹرز پر لاٹھی چارج، آنسو گیس اور واٹر کینن کے استعمال کیا گیا۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ پولیس نے رکن قومی اسمبلی شازیہ ثوبیہ اور مسرت مہیسر کو بھی گرفتار کرلیا، آج تحریک انصاف کے دعووں کا پول کھل گیا ہے، اسلام آباد میں پولیس نے نہتے کارکنوں پر تشدد اور ظلم و بربریت کی قیامت بپا کی۔ انھوں نے کہا کہ آج کا واقعہ نام نہاد جمہوری حکومت اور حکمران جماعت تحریک انتقام کے دور اقتدار میں ظلم کی سیاہ ترین دن کے طور پر یاد رکھا جائے گا۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ وفاقی حکومت نے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری صاحب اور محترم آصف علی زرداری صاحب سیاظہار یکجہتی کیلئے پیپلز پارٹی کے رہنماوں اور کارکنوں کو اسلام آباد پہنچنے سے روکنے کیلئے جو اقدامات کئے-انہوں نے 12 مئی 2007 کے پرویز مشرف کے آمرانہ ہتھکنڈوں کو بھی مات دے دی۔ انھوں نے مزید کہا کہ حکمران سن لیں پیپلز پارٹی کی قیادت اور ان کے کارکنوں کو تشدد اور گرفتاریوں سے ڈرا نہیں سکتے۔

مزید :

صفحہ اول -