سندھ حکومت کی کارکردگی پر تحریک انصاف کا وائٹ پیپر جاری

سندھ حکومت کی کارکردگی پر تحریک انصاف کا وائٹ پیپر جاری

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)پاکستان تحریک انصاف نے سندھ حکومت کی کارگرگی پر وائٹ پیپر جاری کردیا سندھ حکومت کے خلاف وائٹ پیر آڈیٹر جنرل آف پاکستان کی رپورٹ پر مشتمل ہے آڈیٹر جنرل آف پاکستان کی رپورٹ 2017-2018 میں سندھ حکومت کے مختلف محکموں میں اربوں روپے کی مالی بے ضابطگیوں کی نشاندہی کی گئی ہے۔سندھ اسمبلی کے کمیٹی روم میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے پی ٹی آئی کراچی کے صدر خرم شیر زمان کا کہنا تھا کہ ڈی جی نیب سے ملاقات کے لئے وقت مانگا ہے۔ڈی جی نیب کو کرپشن کے ثبوت دینے جارہا ہوں اینٹی کرپشن کو بھی وہی ثبوت دونگا دیکھتے ہیں ان کے خلاف کیا کاروائی ہوگی۔بھٹو کے شہر میں ایڈز ہے ان کی چوری کی وجہ سیاسپیکر سندھ اسمبلی سے گزراش کی ہے ایوان کو وقت دیں۔ آڈیٹر رپورٹ پر بحث کرنے کے لئے ایک ایک ایم پی اے نے تیاری کی ہے۔ ایوان کو بتائیں گے عوام کو کے پیسوں کو کس طرح لوٹا ہے۔ مکیش کمار چاولہ نے شراب خانے کھولنے پر ورلڈ ریکارڈ قائم کیا ہے۔اس موقع پرپی ٹی آئی کے پارلیمانی لیڈر حلیم عادل شیخ اور ڈاکٹر سیماء ضیاء سمیت دیگر اراکین سندھ اسمبلی بھی پریس کانفرنس میں شریک تھے۔ خرم شیر زمان نے مزید کہا کہ پیپلزپارٹی کی حکومت کی دو نمبریاں سال بھر چلتی ہیں،آڈیٹر جنرل کی رپورٹ کو کھبی بھی نمایاں نہیں کیا گیا۔اسپیکر سے کہا ہے کہ اسمبلی قواعد کے مطابق آڈیٹر جنرل کی رپورٹ پر بحث کی جائے۔لاڑکانہ میں بچوں کو ایڈز ہوگیا محکمہ صحت میں گیارہ ارب روپے کے کرپشن کی نشاندہی کی گئی ہے۔ ان لوگوں سے دوائیاں لی گئی ہیں جو ان کے بغل بچہ ہیں۔ مراد علی شاہ ٹائی لگا کر بجٹ پیش کرتے ہیں وزیر اعلی کے محکمہ خزانہ میں ساڑھے تیرہ ارب روپے کی مالی بے ضابطگیاں کی گئی ہے۔ محکمہ خوارک اور ورکس اینڈ سروسز میں اربوں روپے کی مالی ضابطگیاں کی گئی۔مکیش کمار چاولہ کو اربوں روپے کے کرپشن کا حساب دینا ہوگا،محکمہ ایکسائز میں ساڑھے ستائس ارب روپے کی بے ظابطگیاں کی گئی ہے۔خرم شیر زمان کا مزید کہنا تھا کہ اٹھارویں ترمیم پر نظرثانی کی جائے،وفاق کے دئیے ہوئے پیسوں کا حساب کون لے گا۔محکمہ توانائی اور داخلہ میں کروڑوں روپے کی بے ضابطگیاں کی گئی ہے۔ آڈیٹر جنرل آف پاکستان حساب مانگ مانگ کر تھک چکے ہیں لیکن یہ حساب نہیں دیتے۔ چیف جسٹس سپیریم کورٹ سے اپیل ہے کہ نوٹس لیں عوام کو پانی اور دیگر مسائل میں الجھا دیا ہے ن سے ایک ایک روپے کا حساب لیا جائے گا، جو ملک کا پیسہ لوٹ کر بھاگے گا ان کو واپس لانے کی بھی تیاری کرلی ہے،اسکول میں بچوں کو معلوم ہونا چاہیے کہ ان کے والد کے پاس پیسے کیسے آرہا ہے۔پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے پی ٹی آئی سندھ کے قائم مقام صدر و پارلیمانی لیڈر حلیم عادل شیخ کا کہنا تھا کہ آصف علی زرداری کو کیس نمبر 420 ملا ہے،پیپلزپارٹی کا چہرہ ایڈز زدہ ہے وہ کس منہ سے کسی کو بچائیں گے، حلیم عادل شیخ ایڈز کے لئے50 ہزار اسکریننگ کٹس دے رہے ہیں۔ ہماری اور ان کی تحریک میں گدھے اور گھوڑے کا فرق ہے۔لاڑکانہ کے ایم این اے اور ایم پی ایز کا بھی ایڈز ٹیسٹ کرایا جائے۔وزیراعلی کو اگر وفاق سے شکایت ہے وہ تحریری طور پر وفاق کو آگاہ کرے، کسی پر الزام نہیں لگا رہے آڈیٹر جنرل کے رپورٹ کی بنیاد پر بات کررہے ہیں۔ اس موقع پر رکن سندھ اسمبلی ڈاکٹر سیما ضیاء کا کہنا تھا کہ صرف ان کو پیسہ نہیں دینگے حساب بھی لینگے، ان کو دئیے ہوئے پیسے مٹی میں مل جاتے ہیں۔ جے آئی ٹی کی رپورٹ میں جو لکھا ہے اگر کوئی کھٹمنڈو میں بھی ہوں تو بچ نہیں پائے گا۔

مزید :

صفحہ اول -