پشاور میں نیشنل گیمز کرانے سے نیاٹیلنٹ سامنے آئیگا:خالد نور

پشاور میں نیشنل گیمز کرانے سے نیاٹیلنٹ سامنے آئیگا:خالد نور

  

پشاور (این این آئی)خیبر پختونخوااولمپک ایسوسی ایشن کے پی آر اواور صوبائی کراٹے ایسوسی ایشن کے سیکرٹری جنرل خالد نور نے کہاہے کہ پشاور سمیت ملک بھر میں کھیلوں کی سرگرمیوں کو فروغ دے کر نوجوان نسل کو انتہا پسندی، منشیات اور دیگر منفی سرگرمیوں سے بچایا جا سکتا ہے، اس میں کوئی شک نہیں کہ ہمارے نوجوان بے پناہ صلاحیتوں، ذہانت اور جذبے سے مالامال ہیں اور انہیں دنیا بھر میں جہاں بھی موقع ملتا ہے وہ اپنی صلاحیتوں کو بروئے کار لاتے ہوئے اپنی ذہانت کا لوہا منواتے ہیں اور پاکستان کیلئے فخر اور نیک نامی کا باعث بنتے ہیں۔میڈیاسے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ہمارے کھلاڑی پوری دنیا میں پاکستان کی پہچان اور شناخت ہیں،لیکن عدم توجہ کی وجہ سے ہماری کھیلیں زوال کا شکار ہیں نوجوانوں کی حوصلہ افزائی اور سرپرستی کیلئے حکومت کو اپنے تمام تر وسائل بروئے کارلانے چاہیئے۔

انکاکہناتھاکہ خیبر پختونخواحکومت نے گزشتہ چند سالوں میں صوبے بھر میں انڈر23گیمزسمیت کئی دیگر کھیلوں کے مقابلوں کا انعقادکرکے تسلسل سے پورے صوبے میں نوجوان کھلاڑیوں اور طالب علموں کو نئی پہچان اور شناخت دی ہے۔ خصوصا ًانڈر23گیمز نے پورے صوبے میں نوجوان کھلاڑیوں نے پوری دنیا کی توجہ پاکستان کی طرف مبذول کرا دی ہے اور صوبے کے ہر شہر میں کھیلوں، کھلاڑیوں اور کھیل کے میدانوں کو ازسر نو منظم کیا جا رہا ہے،حکومت صوبے کی 65 فیصد نوجوان آبادی کو ملک کا مفید ترین شہری بنانے کیلئے متحرک اور پرعزم ہے۔ عالمی سطح پر کھیلوں کی سرپرستی اور نوجوانوں کی حوصلہ افزائی کیلئے حکومتوں اور عالمی اداروں کو بھرپور کوشش کرنا ہو گی۔ انہوں نے کہاکہ صوبائی حکومت صوبے میں کھیلوں کے فروغ میں انتہائی سنجیدگی کیساتھ کام کر رہی ہے انشاء اللہ مستقبل میں اسکے اچھے نتائج سامنے آئیں گے نوجوانوں کو صحت مند سرگرمیوں کی طرف مصروف رکھنا سب سے زیادہ اہم ہے کھیلوں کے میدان آباد کرکے ہم نئی نسل کو زیادہ بہتر اور صحت مند پاکستان دے سکتے ہیں

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -