قبائلی اضلاع کی معاشی وسماجی ضروریات پوری کرنے کیلئے ممکن تعاون کرینگے ، حفیظ شیخ

قبائلی اضلاع کی معاشی وسماجی ضروریات پوری کرنے کیلئے ممکن تعاون کرینگے ، ...

  

پشاور( سٹاف رپورٹر)سابقہ فاٹا کے خیبر پختونخوا میں انضمام کے بعد قبائلی اضلاع کے عوام کی فلاح وبہبوداور انہیں ترقی کے قومی دھارے میں لانے کی بنیادی ذمہ داری وفاقی حکومت کے ذمے ہے لیکن اس کے ساتھ ساتھ خیبر پختونخوا حکومت بھی ضم شدہ اضلاع کی تعمیر وترقی کے لئے اپنا بھرپور کردار ادا کررہی ہے۔این ایف سی ایوارڈ کے تحت وسائل کی تقسیم کے حتمی فارمولہ طے پانے تک قبائلی اضلاع کی معاشی اور سماجی ضروریات کا جائزہ لینے اور اس سلسلے میں لائحہ عمل مرتب کرنے کے لئے وزیر اعظم کے مشیر برائے خزانہ ڈاکٹر حفیظ شیخ کی سربراہی میں ایک اعلیٰ سطح اجلاس اسلام آباد میں منعقد ہوا۔اجلاس میں خیبر پختونخوا کے وزیر خزانہ تیمور سلیم جھگڑا،وزیراعظم کے مشیر برائے اسٹیبلشمنٹ محمد شہزاد ارباب،وفاقی سیکرٹری خزانہ نوید کامران بلوچ کے علاوہ دیگر متعلقہ اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔صوبائی وزیر خزانہ تیمور سلیم جھگڑانے صوبے میں ضم ہونے والے اضلاع کی مالی ضروریات سے اجلاس کو تفصیلی طور پر آگاہ کیا۔انہوں نے بتایا کہ فاٹا ڈیویلپمنٹ فنڈز کوقبائلی اضلاع میں سماجی شعبے باالخصوص صحت اور تعلیم کے شعبوں کی ترقی اور ان اضلاع میں سڑکوں کی حالت زار اور بجلی انفراسٹرکچر کی بہتری کے لئے بروئے کار لایا جائے گا۔اس موقع پر اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی مشیر خزانہ ڈاکٹر حفیظ شیخ نے کہا کہ وفاقی حکومت سابقہ فاٹاکی مالی ضروریات کو پورا کرنے اور خیبر پختونخوا حکومت کی جانب سے ضم شدہ اضلاع کی سماجی و معاشی ترقی کے لئے کی جانے والی کوششوں کو بامقصد بنانے کے لئے ہرممکن تعاون فراہم کرے گی۔انہوں نے اجلاس کو یقین دلایا کہ وزارت خزانہ ضم شدہ اضلاع کے لئے فنڈز کے بروقت اجراءکو یقینی بنائے گا۔انہوں نے اجلاس کو مزید آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ وفاقی حکومت نے پہلے بھی سابقہ قبائلی ایجنسیوں کے عارضی طور پر بے گھر ہونے والے افراد کی بحالی کے لئے خاطر خواہ فنڈز جاری کئے ہیں۔اجلاس میں تفصیلی غور وخوض کے بعد شرکاءکی جانب سے اس امر پر اتفاق کیاگیا کہ وفاقی اور خیبر پختونخوا کی صوبائی حکومتیں این ایف سی ایوارڈ کے حتمی اجراءاور اس کے تحت قبائلی اضلاع کے لئے وسائل مختص کرنے تک ضم شدہ اضلاع کی سماجی ومعاشی ضروریات کو پورا کرنے کے لئے وفاقی اور صوبائی بجٹ2019-20 میں ترجیحی بنیادوں پر فنڈز مختص کریں گی۔

مزید :

صفحہ اول -