قبائلی اضلاع انتخابات ، پی ٹی آئی ٹکٹوں کی تقسیم غیر منصفانہ ، میرٹ کے برعکس

قبائلی اضلاع انتخابات ، پی ٹی آئی ٹکٹوں کی تقسیم غیر منصفانہ ، میرٹ کے برعکس

  

پشاور(سٹی رپورٹر)پاکستان تحر یک انصاف نے قبائلی اضلاع میں صوبائی اسمبلی کی ٹکٹوں کی تقسیم غیر منصفانہ اور میر ٹ ے بر عکس کر د یئے ہیں پارٹی ٹکٹ کو سر ما یہ داروں ،جا گیرداروں، وڈیروں اور رشتہ داروںکے ہا تھوں تھما د یئے جس سے تحر یک انصاف نے اپنے ہی ہا تھوں سے قائد تحریک عمران خان کے نظر یا ت کا جنازہ نکال یا پار لیما نی بورڈ نے انٹرویو کے دوران پہلے بینک بیلنس کے حوالے سے سوال پوچھا تھا جو کہ انصاف کےلئے 25سال تک جد وجہدکر نے باوجود آج پی ٹی آ ئی چند مفادپر ستوں کے ہا تھوں یر غمال گیا ہے۔گزشتہ روزپشاور پر یس کلب میں انصاف ڈاکٹر فورم قبائلی اضلاع کے صدر ڈاکٹر نبی جان آفریدی،نیک رحمان ،عجب گل ،عبدالغنی ،ملک سعید،انجینئرخائستہ محمد اور د یگر قبائلی اضلاع کے رہنما و¿ں کے ہمراہ پر یس کا نفر نس کر تے ہو ئے مقررین کا کہنا تھا کہ پاکستان تحر یک انصاف ایک نظر یا تی جما عت ہے جس میں ہر فیصلے میر ٹ بنیاد پر کئے جا تے ہیں لیکن پا ر لیما نی بورڈ نے قبا ئلی اضلاع کےلئے ٹکٹوں کی تقسیم میر ٹ کے بجا ئے امیر تر ین لوگوں کو د یئے اور مذ کورہ بورڈ نے تمام اضلاع کے سینئر ر ہنما و¿ں کو نظرانداز کر د یا ہے جس کے اثرات پارٹی پرپڑے گی انہوں نے کہاکہ آج پار لیما نی بورڈ نے میرٹ اور تبدیلی کے جنا زے نکال کر دیئے کیونکہ ہم نے گزشتہ بیس سالوں سے خانزام ،نواب ازم اور ملک ازم کےخلاف سیا سی جنگ چھڑی ہے لیکن پارٹی فیصلے کےخلاف قبائلی اضلاع میں پی ٹی آئی کے وجود آ ئندہ الیکشن میں تابوت میں آخر ی کیل ثا بت ہو گی۔انہوں نے کہاکہ نا اہل اور پیراشوٹ سے آنے والے امیدوارکی وجہ سے نظرےاتی کارکنوں نظر انداز کر د یا ۔انہوں نے چیئر مین عمران خان سے مطالبہ کیا کہ قبائلی اضلاع کےلئے پارٹی ٹکٹوں کی تقسیم کے فیصلے پر نظر ثانی کر کے دوسرا پارلیمانی بورڈ تشکیل کیا جا ئے اور پارلیمانی بورڈ میں گور نر شاہ فر ما ن کو بیٹھنے کےخلاف بھی پارٹی منشور کے مطا بق ایکشن لیا جا ئے ۔

مزید :

صفحہ اول -