5ہزار سال پرانی قبر کی کھدائی، اس میں موجود لاش نے کیا اوڑھا ہوا تھا؟ دیکھ کر ماہرین کو بھی آنکھوں پر یقین نہ آئے

5ہزار سال پرانی قبر کی کھدائی، اس میں موجود لاش نے کیا اوڑھا ہوا تھا؟ دیکھ کر ...
5ہزار سال پرانی قبر کی کھدائی، اس میں موجود لاش نے کیا اوڑھا ہوا تھا؟ دیکھ کر ماہرین کو بھی آنکھوں پر یقین نہ آئے

  

ماسکو(مانیٹرنگ ڈیسک) روس کے علاقے سائبیریا میں سائنسدانوں نے ایک 5ہزار سال قدیم قبرستان دریافت کیا جس میں سے ایک قبر کھولی گئی تو اس میں موجود لاش نے سر پرایسی چیز پہن رکھی تھی کہ دیکھ کر ماہرین آثار قدیمہ بھی ہکا بکا رہ گئے۔ میل آن لائن کے مطابق اس لاش کی کھوپڑی پر ایک ٹوپی یا تاج نما چیز لپٹی ہوئی تھی جوحیران کن طور پر پرندوں کی چونچوں سے بنی ہوئی ۔ ان چونچوں کے متعلق ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ چونچیں ممکنہ طور پر بگلے یا سارس کی نسل کے کسی پرندے کی ہیں۔

رپورٹ کے مطابق سائنسدانوں نے اس لاش کی باقیات کے ٹیسٹ کرکے بتایا ہے کہ یہ شخص پانچ ہزار سال قبل دنیا میں زندہ تھا۔ وہ تانبے کا دور تھا۔ سائنسدانوں نے اس شخص کو ’برڈ مین‘ کا نام دیا ہے، جس کی باقیات پر نووسیبیرسک انسٹیٹیوٹ آف آرکائیولوجی میں تجربات کیے جا رہے ہیں۔ تحقیقاتی ٹیم کی سربراہ لیلیا کوبیلیوا کا کہنا تھا کہ ”پرندوں کی چونچوں سے بنا یہ لباس اس شخص کی کھوپڑی سے گردن تک آ رہا تھا اور اس سے ایک کالر سا بھی بنا ہوا تھا۔ ممکنہ طور پر اس زمانے میں چونچوں سے لباس بنانے کا رواج تھا یا اسے اس شخص نے اپنے سر اور گردن کی حفاظت کے لیے بنایا تھا۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -