سندھ میں بڑے پیمانے پر بارشوں کی پیش گوئی، محکمہ زراعت میں ایمرجنسی لاگو، چھٹیاں منسوخ

سندھ میں بڑے پیمانے پر بارشوں کی پیش گوئی، محکمہ زراعت میں ایمرجنسی لاگو، ...
سندھ میں بڑے پیمانے پر بارشوں کی پیش گوئی، محکمہ زراعت میں ایمرجنسی لاگو، چھٹیاں منسوخ

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)سندھ میں بڑے پیمانے پر بارشوں کی پیش گوئی کی گئی ہے، سندھ حکومت نے محکمہ زراعت کے تمام افسران و ملازمین کی چھٹیاں منسوخ کردیں ہیں،اس سلسلے میں صوبائی وزیر زراعت اسماعیل راہو کا کہنا ہے کہ بارشوں کے پیش نظر صوبے بھر میں محکمہ زراعت کے تمام افسران کی چھٹیاں منسوخ کردی گئیں ہیں۔

تفصیلات کے مطابق صوبائی وزیر زراعت اسماعیل راہو کا کہنا ہے کہ سندھ حکومت نے بارشوں کے پیش نظر ٹڈی دل کے خاتمے کیلیے 98 فلیڈ ٹیموں کی ڈیوٹیاں لگادی گئی ہیں، بارشیں ہونے سے ٹڈی ریگستانی علاقوں میں فصلوں کو نقصان پہنچا سکتی ہے, سندھ حکومت کی جانب سے متاثرہ فصلوں پر سپرے مہم جاری ہے، 24 گھنٹوں میں صوبے کے 12 متاثرہ اضلاع میں 8448 ہیکٹرز پر سپرے کرکے ٹڈی دل کا خاتمہ کیا گیا, سندھ میں 63 لاکھ 50 ھزار سے زائد فیلڈ ٹیموں نے سروے کیا اور 27 ھزار 433 ہیکٹرز پر سپرے کرچکی ہیں. اسماعیل راہو کا کہنا تھا کہ بدین، گھوٹکی، خیرپور، سانگھڑ، نوشہروفیروز، سکھر، SBA، کشمور، ٹنڈواللہیار، مٹیاری، دادو اور جامشورو میں کیا گیا ہے, سندھ کی عوام منتظر ہے کہ وفاق ٹڈی دل کہ خاتمے کیلیے کب عملی اقدام کریگی, بارش پڑنے کے بعد نرم زمین پرٹڈی دل 1 سکوائر میٹر تک ایک ہزار انڈے دے سکتی ہے, تیز بارشیں ٹڈیوں کی افزائش کیلیے ریگستانی علاقوں میں سازگار ماحول پیدا کرتی ہیں.

صوبائی وزیرنے کہا کہ محکمہ زراعت کی ٹیمیں دن رات کام کررہی ہیں, ریگستانی علاقوں میں سروے ٹیمیں الرٹ ہیں, سروے اور مانیٹرنگ بھی کی جارہی ہے, عمران خان کو اگر سیر سپاٹوں سے فرست ملی ہو تو ٹڈی دل پر بھی ایکشن لیں, وفاقی حکومت نے ابھی تک سندھ میں فضائی سپرے شروع نہیں کیا۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -