طیارہ حادثہ، شہدا کے لواحقین کو معاوضے کی ادائیگی شروع، 15خاندانوں کو فی وقت رقم لینے سے انکار

    طیارہ حادثہ، شہدا کے لواحقین کو معاوضے کی ادائیگی شروع، 15خاندانوں کو فی ...

  

کراچی (این این آئی،مانیٹرنگ ڈیسک) طیارہ حادثہ کیس میں شہدا کے لواحقین کو معاوضے کی ادائیگی شروع کر دی گئی، پہلے مرحلے میں 36افراد کو معاوضہ ادا کر دیا گیا،15شہدا کے لواحقین نے فی الوقت معاوضہ لینے سے انکار کر دیا۔تفصیلات کے مطابق ترجمان پی آئی اے کا کہنا ہے کہ 36افراد کو 10لاکھ فی کس معاوضہ ادا کر دیا گیا، بقیہ مسافروں کے ورثا کو بھی ایک دو دن میں معاوضہ ادا کر دیا جائے گا۔لواحقین کی 15 فیملیز نے فی الوقت معاوضہ لینے سے انکار کر دیا ہے، انشورنس کی مد میں لواحقین کو فی کس 50 لاکھ روپے بھی ادا کیے جائیں گے، اس سلسلے میں 97 مسافروں میں سے57 افراد کی فہرست تیار کی گئی تھی۔علاوہ ازیں فرانسیسی ماہرین کی ٹیم نے گزشتہ روزہیلی کاپٹر کے ذریعے جائے حادثہ اور رن وے کا معائنہ کیا اور ویڈیوز بھی بنائیں۔علاوہ ازیں پی آئی اے طیارہ حادثہ میں جاں بحق افراد کی میتوں کی شناخت اور حوالگی کے حوالے سے ایس او پیز جاری کر دئیے گئے۔کمشنر کراچی افتخار شالوانی کی جانب سے جاری کردہ ایس او پیز کے مطابق متعلقہ ڈپٹی کمشنر ایدھی اور چھیپا سردخانوں پر اسسٹنٹ کمشنرز تعینات کریں گے۔ایس او پیز کے تحت پولیس قانونی تقاضوں کیلئے سردخانوں پر ایس پیز کی ڈیوٹی لگائے گی جبکہ دونوں سردخانوں پر ایم ایل او تعینات کئے جائیں گے۔کمشنر کراچی افتخار شالوانی کا کہنا ہے کہ ڈی این اے ملنے پر پولیس افسر، ایم ایل او لاش حوالگی کے تقاضے پورے کریں، پولیس افسر اور ایم ایل او لاش کی فزیکل تصدیق کا عمل مکمل کریں۔ایس او پیز کے تحت ایسی اور ایم ایل او، ڈی این اے رپورٹ ملنے پر لواحقین سے رابطہ کریں گے جبکہ ایس ایس پی لاش کی وصولی کیلئے لواحقین سے رابطہ کریں گے، تقاضے پورے ہونے پر پولیس لواحقین کو عزت واحترام سے لاش حوالے کرے۔مزید برآں کراچی میں جہاز گرنے کے مقام پر ملبے سے رینجرز کو مزید جلی ہوئی رقم ملی ہے جسے پی آئی اے حکام کے حوالے کر دیا گیا ہے۔ذرائع کے مطابق رینجرز اہلکاروں کو گزشتہ روز ملبے سے 93ہزار روپے کے جلے ہوئے نوٹ دو بٹووں سے ملے۔ جبکہطیارہ حادثے میں شہید ہونے والے پولانی فیملی کی میتیں ورثا کے حوالے کردی گئیں۔دوسری طرف سندھ ہائیکورٹ میں حادثے کی شفاف تحقیقات سے متعلق درخواست کی سماعت ہوئی۔ عدالت نے استفسار کیا کہ واقعے کی رپورٹ کب آئے گی۔ڈپٹی اٹارنی جنرل پاکستان نے بتایا کہ 22 جون تک رپورٹ آنے کے امکانات ہیں جبکہ وزیراعظم کی ہدایت پر تحقیقاتی رپورٹ پبلک کی جائے گی۔ جسٹس محمد علی مظہر نے درخواست گزار سے استفسار کیا کہ حادثے کی تحقیقات تو ہو رہی ہیں،حتمی رپورٹ سے پہلے حکومت کو کیسے نوٹس جاری کریں۔ عدالت نے سماعت 25 جون تک ملتوی کر دی۔

طیارہ حادثہ

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) صدر مملکت عارف علوی نے کراچی فضائی حادثہ میں جاں بحق افراد کے خاندانوں کو جلد از جلد معاوضہ فراہم کرنے کی ہدایت کی ہے۔جمعہ کو صدر ڈاکٹر عارف علوی سے چیف ایگزیکٹو آفیسر پی آئی اے ایئر مارشل ارشد محمود ملک نے ملاقات کی۔صدر کو کراچی میں طیارہ حادثہ کے بعد ریلیف کے اقدامات، متاثرین کی مدد اور تحقیقات میں پیشرفت سے متعلق بریفنگ دیتے ہوئے بتایاکہ اب تک 44 میتیں لواحقین کے حوالے کی گئی ہیں۔ صدر مملکت نے کہاکہ طیارہ حادثہ عظیم سانحہ ہے جس پر پوری قوم سوگوار ہے، طیارہ حادثہ میں جاں بحق افراد کے لواحقین کے دکھ میں برابر کے شریک ہیں۔صدر نے کہاکہ طیارہ حادثہ کے جاں بحق افراد کے لواحقین سے اظہار تعزیت کیلئے رابطہ کروں گا۔صدر نے پی آئی اے کی جانب سے طیارہ حادثہ کے بعد ریلیف اقدامات اور امدادی سرگرمیوں کو سراہا۔

صدر مملکت

مزید :

صفحہ اول -