نشتر ہسپتال: کرونا وائرس سے دو مریض جاں بحق، 128افراد صحت یاب ہو کر ڈسچارج

  نشتر ہسپتال: کرونا وائرس سے دو مریض جاں بحق، 128افراد صحت یاب ہو کر ڈسچارج

  

ملتان(نمائندہ خصوصی)نشتر ہسپتال میں زیر علاج کورونا میں مبتلا 2 افراد دم توڑ گئے،نشتر ہسپتال میں کورونا کے باعث ہونے والی اموات کی مجموعی تعداد 69ہو گئی، آئی سو لیشن کے چھ وارڈز میں کورونا میں مبتلا زیر علاج مریضوں کی تعداد 26 ہو گئی،شبہ میں 22مریض زیر علاج ہیں،رواں سال کورونا کے شبہ میں رپورٹ ہونے والے 1023 افراد میں سے 263میں کورونا کی تصدیق ہوئی 128 صحت یاب ہو کر(بقیہ نمبر5صفحہ6پر)

گھروں کو روانہ کر دئیے گئے ہیں تفصیل کے مطابق نشتر ہسپتال کے آئی سو لیشن وارڈ میں زیر علاج کورونا میں مبتلا ملتان کے رہائشی 37 سالہ فاروق , اور 50 سالہ اعجاز نے جمعہ کی دوپہر دم توڑ دیا یوں یکم اپریل سے 29مئی کے درمیان نشتر ہسپتال میں کورونا کے باعث ہونے والی اموات کی مجموعی تعداد 69ہو گئی ہے جبکہ نشتر ہسپتال کے چھ آئی سو لیشن وارڈز میں اس وقت کورونا میں مبتلا 26مریض زیر علاج ہیں جبکہ 03 مریضوں کی حالت تشویشناک بتائی جا رہی ہے،جبکہ کورونا کے شبہ میں 22مریض زیر علاج ہیں,جن کی رپورٹس کا انتظار ہے،ادھر فوکل پرسن نشتر ہسپتال ڈاکٹر عرفان ارشد کے مطابق نشتر ہسپتال میں اب تک ملتان سمیت جنوبی پنجاب بھر اور قرنطینہ،تبلیغی مراکز سے لائے گئے 10 ہزار بیس افراد کے نمونوں کے کورونا کے تشخیصی ٹیسٹ کئے گئے جن میں سے 1182 افراد میں کورونا کی تصدیق ہوئی ہے جبکہ نشتر ہسپتال سے 128 افراد کو کورونا سے صحت یاب ہونے پر ڈسچارج بھی کیا جا چکا ہے۔ادھرنشتر ہسپتال میں کورونا آئی سی یو نے کام کا آغاز کر دیا،وائس چانسلر نشتر میڈیکل یونیورسٹی پروفیسر ڈاکٹر مصطفی کمال پاشا کی ہدایت کے مطابق پرنسپل نشتر میڈیکل کالج پروفیسر ڈاکٹر افتخار حسین خان کی کاوشوں سے نشتر ہسپتال ملتان کے وارڈ نمبر 22 میں پنجاب بھر کے پہلے کورونا آئی سی یو نے اپنے کام کا آغاز کر دیا ہے،اس ایچ ڈی یو، آئی سی یو کا قیام شہر کے مخیر حضرات کے تعاون سے ممکن ہو سکا ہے،کورونا آئی سی یو، ایچ ڈی یو 16 بیڈز پر مشتمل ایک وارڈ ہے جس میں 8 بیڈز کورونا کے کنفرم مریضوں اور 8 مشتبہ مریضوں کے لیے مختص کیے گئے ہیں۔ اس وارڈ میں ٹوٹل 11 وینٹی لیٹرز مہیا کردیئے گئے ہیں۔ جن میں سے 3 وینٹی لیٹرز سٹینڈ بائی رہیں گے تاکہ کوئی بھی وینٹی لیٹر خراب ہونے کی صورت میں فوری طور پر تبدیل کیا جاسکے،آئی سی یو میں 3 ڈائیلسز مشینیں بھی مہیا کر دی گئی ہیں۔ جنرل آئی سی یو کے برعکس یہاں مریضوں کو دوسری جگہ پر منتقل کرنے کی بجائے انکے بیڈ پرہی ڈائیلسز کی سہولت فراہم کی جائے گی،اس آئی سی یو میں انتہائی نگہداشت اور شعبہ امراض سینہ کے ماہر ڈاکٹرز اپنے فرائض سرانجام دیں گے۔ اس وقت اس آئی سی یو میں 7 مریض زیر علاج ہیں جن میں سے 2 کنفرم جبکہ 5 کی رپورٹس کا انتظار ہے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -