جعلی پولیس مقابلے میں نوجوان کی ہلاکت، شہر میں احتجاجی مظاہرے

جعلی پولیس مقابلے میں نوجوان کی ہلاکت، شہر میں احتجاجی مظاہرے
جعلی پولیس مقابلے میں نوجوان کی ہلاکت، شہر میں احتجاجی مظاہرے

  

عمرکوٹ(سید ریحان  شبیر  )ایک ہفتہ  قبل سانگھڑ ضلع کے علاقے کھاہی تھانہ کی حد میں مبینہ جعلی  پولیس مقابلے میں  نوجوان سومار مہر کی ہلاکت کے خلاف عمرکوٹ شہر میں احتجاجی مظاہرہ کیا گیا، مہر برادری نے نوجوان سومار مھر کی ہلاکت کے خلاف عمرکوٹ پریس کلب کے سامنے بڑا  احتجاجی مظاہرہ کیا ، مظاہرین نے ہاتھوں میں بینر اور پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے جن پر نوجوان کی ہلاکت اور سانگھڑ پولیس کے خلاف نعرے درج تھے ۔

مظاہرین کا کہنا تھا کہ سومار مہر اور علی حیدر  رونجھو کو کھپرو کے ایک  زمیندار کے اغوا کےمبینہ  الزام میں گرفتار کرنے کے بعد جھوٹے پولیس مقابلے میں قتل کردیا گیا جبکہ اغوا میں ملوث بااثر افراد کو پیسے لے کر چھوڑا گیا ۔ مظاہرین نے مطالبہ کیا نوجوان کے قتل میں ملوث پولیس اہلکاروں اور اعلٰی پولیس  افسران کے خلاف کاروائی کی جائے ۔

واضع رہے کہ ایک ہفتہ قبل سانگھڑ پولیس نے دو الگ الگ  پولیس مقابلوں میں علی حیدر رونجھو اور سومار مہر کی ہلاکت کا دعویٰ  کیا تھا مظاہرے میں بڑی تعداد میں مہر برادری کے نوجوانوں سمیت مختلف سماجی عوامی اور سول سوسائٹی کے نمائندوں نےشرکت کی مظاہرین نے وزیراعلیٰ سندھ  اور آئی جی سندھ پولیس سے مطالبہ کیا کہ علی حیدر رونجھو اور سومار مہر کو جعلی پولیس مقابلے میں مارے جانے کی اعلیٰ سطح پر تحقیقات کی جائے اور جعلی پولیس مقابلے میں ملوث پولیس اہلکاروں کو منظر عام پر لاکر قرار واقعی سزا دی جائے ۔ 

مزید :

علاقائی -سندھ -عمرکوٹ -