وائٹ ہاؤس کی  مالی سال 2022 کے لئے60کھرب ڈالر کابجٹ تجویز

وائٹ ہاؤس کی  مالی سال 2022 کے لئے60کھرب ڈالر کابجٹ تجویز

  

واشنگٹن (شِنہوا)وائٹ ہاؤس نے  مالی سال 2022  کے لئے60 کھرب امریکی ڈالر مالیت کی بجٹ تجویز پیش کی ہے جس پر ریپبلکن قانون سازوں اور بجٹ  ماہرین کی جانب سے تنقید کی گئی ہے۔بجٹ تجویز میں، جس میں صدر جو بائیڈن کے بنیادی ڈھانچے، تعلیم، حفظان صحت اور دیگر شعبوں میں  سرمایہ کاری بڑھانے کے منصوبے شامل  ہیں، کئی دہائیوں کے دوران وفاقی اخراجات کو سب سے زیادہ پائیدار سطح پر لے جائے گی۔بجٹ میں اگلی پوری  دہائی کے دوران 60 کھرب ڈالر سے زیادہ کے اخراجات اور مالی سال 2031 کے لئے  انہیں 82 کھرب ڈالر تک بڑھانے کی تجویز دی گئی ہے۔اس دوران  اگلے 10 سالوں میں بجٹ خسارہ13 کھرب ڈالر سے زیادہ رہے گا۔سینیٹ میں اقلیتی رہنما مچ میک کونل نے اس بجٹ منصوبے پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ امریکی شہری پہلے ہی عدم مساوات پر مبنی اقتصادیات سے نقصان اٹھارہے ہیں جس میں حقائق کو نظرانداز کیا گیا ہے۔ری پبلکن رہنما نے ٹویٹر پر کہا کہ اب تک بائیڈن انتظامیہ نے رواں سال اضافی 70کھرب ڈالر کے اخراجات کی سفارش کی ہے جودوسری جنگ عظیم کے دوران ہمارے اخراجات سے زیادہ ہیں۔میک کونل نے کہا کہ ڈیموکریٹس کواپنی فضول خرچی کی عادت پر قابو پانا ہوگا۔

بجٹ تجویز

مزید :

صفحہ اول -