عراق میں پرتشدد مظاہرے، وزیر اعظم نے مستعفی ہونے کا اعلان کردیا

عراق میں پرتشدد مظاہرے، وزیر اعظم نے مستعفی ہونے کا اعلان کردیا
عراق میں پرتشدد مظاہرے، وزیر اعظم نے مستعفی ہونے کا اعلان کردیا

  



بغداد (ڈیلی پاکستان آن لائن) ملک میں گزشتہ ماہ سے جاری پرتشدد احتجاجی مظاہروں کے باعث عراق کے وزیر اعظم نے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا۔

عراق کے وزیر اعظم عادل عبدالمہدی المتنفیقی کے دفتر سے جاری بیان کے مطابق وہ اپنا استعفیٰ پارلیمنٹ کو پیش کریں گے جس کے بعد ارکان پارلیمنٹ نئے وزیر اعظم کا انتخاب کریں گے،انہوں نے مطالبہ کیا ہے کہ پارلیمان ان کا جلد از جلد اجلاس طلب کرے۔ خیال رہے کہ عراقی پارلیمان کا آئندہ اجلاس اتوار کے روز ہوگا۔

خیال رہے کہ عراق میں مہنگائی، نئی نوکریوں اور ایران کی مداخلت کے خلاف گزشتہ ماہ سے پرتشدد مظاہروں کا سلسلہ جاری ہے جس میں اب تک 344 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔ جمعرات کے روز مظاہرین نے ایرانی قونصل خانے کو آگ لگادی تھی ، فوج کی جانب سے مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے فائرنگ کی گئی جس کے نتیجے میں 11 افراد مارے گئے، مظاہرین پر تشدد پر عراقی وزیر اعظم نے فوج کے کمانڈر کو عہدے سے ہٹادیا تھا۔

مزید : عرب دنیا /اہم خبریں