سینیٹ داخلہ کمیٹی،تعزیرات پاکستان ترمیمی بل پر سب کمیٹی تشکیل

سینیٹ داخلہ کمیٹی،تعزیرات پاکستان ترمیمی بل پر سب کمیٹی تشکیل

  



اسلام آباد (این این آئی)سینٹ کی داخلہ کمیٹی نے یکٹا ترمیمی بل پر تفصیلی غور کے بعد وزارت قانون سے رائے مانگ لی۔جمعہ کو چیئر مین قائمہ کمیٹی سینیٹر رحمن ملک نے کہاکہ وزارت داخلہ بھی نیکٹا ترمیمی بل پر تحریری رپورٹ دے۔ انہوں نے کہاکہ وزارت داخلہ اور وزارت قانون کی رپورٹس کے بعد نیکٹا ترمیمی بل پر دوبارہ غور ہو گا۔انہوں نے کہاکہ نیکٹا ترمیمی بل سینیٹر عتیق شیخ کی طرف سے سینٹ میں پیش کیا گیا تھا۔وفاقی وزیر پارلیمانی امور نے کہاکہ نیکٹا فعال نہ ہونے کی وجہ فنڈز کی قلت ہے،نیکٹا کو افرادی قوت سمیت وسائل کی ضرورت ہے۔ داخلہ کمیٹی میں وفاقی وزیر اعظم سواتی اور سینیٹر جاوید عباسی کے درمیان گرماگرمی ہوئی چیئر مین کمیٹی نے تعزیرات پاکستان ترمیمی بل پر سب کمیٹی بنا دی۔رحمن ملک کی زیر صدارت ہو نے والے اجلاس میں تعزیرات پاکستان ترمیمی بل2019 پر تفصیلی غور کیا گیا۔تعزیرات پاکستان ترمیمی بل سینیٹر اعظم سواتی نے پیش کیا۔بل میں بیرون ملک جرائم کرنے والے ملزمان کو پاکستان لا کر ٹرائل کرنے سے متعلق ترمیم پیش کی گئی۔کمیٹی نے بل میں ترمیم پر سیکرٹری قانون کی بریفنگ کو مسترد کر دیا۔بل میں ترمیم امتیازی قانون بنانے کی کوشش ہے۔اجلاس میں سینیٹر جاوید عباسی اور وفاقی وزیر اعظم سواتی میں گرما گرمی دیکھی گئی۔ سینیٹر جاوید عباسی نے کہاکہ یہ ترمیم الطاف حسین اور کن ملزمان پر لگے گی ان کے نام بتائے جائیں۔اعظم سواتی نے کہاکہ یہ ترمیم الطاف حسین کیلئے نہیں۔چیئر مین کمیٹی نے تعزیرات پاکستان ترمیمی بل پر سب کمیٹی بنا دی۔رحمن ملک نے کہاکہ سینیٹر جاوید عباسی کی سربراہی میں کمیٹی ایک ہفتے میں رپورٹ دے۔

سینیٹ داخلہ کمیٹی 

مزید : علاقائی