قائمہ کمیٹی آبی وسائل نے ڈیم فنڈز کے اشتہارات پر اخراجات کی تفصیلات مانگ لیں 

قائمہ کمیٹی آبی وسائل نے ڈیم فنڈز کے اشتہارات پر اخراجات کی تفصیلات مانگ لیں 

  



اسلام آباد (این این آئی) قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے آبی وسائل نے ڈیم فنڈز کے اشتہارات پر اخراجات کی تفصیلات مانگ لیں۔نواب یوسف تالپور کی زیر صدارت قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے آبی وسائل کا اجلاس ہوا جس میں دیا مر بھاشا ڈیم حکام کی منصوبے کے حوالے سے کمیٹی کو بریفنگ دی گئی۔ حکام نے بتایاکہ دیا میر بھاشا ڈیم کیلئے 894 ارب روپے درکار ہیں، حکومت کی جانب سے اب تک 87 ارب روپے جاری ہوئے۔ حکام کے مطابق سپریم کورٹ کے ڈیم فنڈز میں 12 ارب روپے جمع ہو چکے ہیں، ابھی تک یہ رقم سپریم کورٹ کے فنڈ میں ہے واپڈا کو نہیں ملی۔ حکام نے بتایاکہ منصوبے کی تکمیل سے 45 سو میگاواٹ بجلی پیدا ہو گی، دیا میر بھاشا ڈیم کی تکمیل ساڑھے 8 سال میں ہو گی۔ارکان کمیٹی نے ڈیم فنڈز کے اشتہارات پر اخراجات کی تفصیلات مانگ لیں۔ خواجہ آصف نے کہاکہ جو رقم ٹی وی اشتہارات پر خرچ کی گئی اس کی معلومات دی جائیں، کیا جتنا فنڈ جمع ہوا وہ اشتہارات پر تو خرچ نہیں ہوا؟۔خواجہ آصف نے کہاکہ سپریم کورٹ کے فیصلے کے مطابق سرکاری ٹی وی کو اشتہارات کے پیسے نہیں دئیے گئے۔ مریم اور نگزیب نے کہاکہ ملکی و غیر ملکی میڈیا میں ڈیم فنڈ کے اشتہارات پر اخراجات کی تفصیلات دی جائیں، بڑا منصوبہ ہے اس کے ماحولیات پر بھی بڑے اثرات ہوں گے۔انہوں نے کہاکہ یہ بھی بتایا جائے کہ منصوبے سے ماحول پر کیا اثرات ہوں گے۔ سیکرٹری آبی وسائل نے کہاکہ وزارت آبی وسائل کے پاس اشتہارات کی تفصیلات نہیں۔ حکام نے بتایاکہ پیمرا یا وزارت اطلاعات یہ معلومات فراہم کر سکتی ہے۔ خواجہ آصف نے کہاکہ یہ پتہ لگانا ضروری ہے کہ جو فنڈ جمع ہوا اس میں سے کتنا اشتہارات پر خرچ ہوا۔

 قائمہ کمیٹی آبی وسائل

مزید : صفحہ آخر