شیر شاہ: اوورہیڈ برج سے سلیب گرنے کا انکشاف، این ایچ اے حکام کی دوڑیں

شیر شاہ: اوورہیڈ برج سے سلیب گرنے کا انکشاف، این ایچ اے حکام کی دوڑیں

  



ملتان(واثق رؤف سے)تین ارب روپے سے زائدکی لاگت سے بننے والی 36کلومیٹرملتان مظفرگڑھ اضافی شاہراہ ناقص میٹریل کے استعمال کے باعث این ایچ اے حکام کے لئے مسلسل عذاب بن گئی ہے۔آئے روزریلوے لائن پربنے ہوئے اوورہیڈبرج کی سلیبیں ٹوٹ کرگرجاتی ہیں گزشتہ(بقیہ نمبر13صفحہ12پر)

روزبھی سلیبیں ٹوٹ کرگرگئیں تاہم خوش قسمتی سے کسی قسم کاجانی یامالی نقصان نہیں ہوابتایاجاتاہے کہ سلیب ٹوٹنے کے بعدنیچے موجودریلوے لائن میں جاکرگری۔این ایچ اے ذرائع کے مطابق 2010ء میں نیشنل ہائی ویزکے زیراہتمام تین ارب روپے سے زائد کی لاگت سے ملتان مظفرگڑھ اضافی شاہراہ اورشیرشاہ کے مقام پراوورہیڈبرج بننے تھے۔منصوبہ میں ناقص میٹریل استعمال کئے جانے کی وجہ سے اس کے مکمل ہوتے ہی نقائص سامنے آناشروع ہوگئے تھے جس میں ناگ شاہ کے قریب نہرپرموجودپلیوں پرٹریفک حادثات ہوتے رہے اسی طرح اوورہیڈبرج سے سلیبیں گرنے کاسلسلہ شروع ہوگیاکئی مقام پرروڈزک زگ ہوگئی جوآج تک حادثات کاسبب بن رہی ہے۔گزشتہ روزبھی اوورہیڈبرج سے سلیب ٹوٹ کرنیچے آگری بتایاجاتاہے کہ ڈویژنل ریلوے انتظامیہ نے بھی متعددباربرج کی سلیبیں گرنے پراین ایچ اے حکام سے احتجاج کیاہے ریلوے حکام کاکہناہے کہ این ایچ اے حکام کسی بڑے حادثہ کے منتظرہیں اس سلسلہ میں این ایچ اے ذرائع کاکہناہے کہ این ایچ اے کوفنڈزکی کمی کاسامناہے برج کی تعمیرکے دوران کنکریٹ کے لئے تیارکیاگیامصالحہ معیارکے مطابق تیارنہیں کیاگیاجس کی وجہ سے آئے روزسلیبیں گرنے کے واقعات رونماہوتے رہتے ہیں اگربرج کی تمام ترسلیبیں نئی ڈالی جائیں تومسلہ حل ہوسکتاہے۔ گزشتہ روزسلیب ٹوٹنے کے واقعہ کی اطلاع ملتے ہی جی ایم مینٹینس پنجاب ساؤتھ منظورارباب اورڈائریکٹرمینٹینس ظفرچانڈیونے مینٹینس سٹاف کوموقع پربھجواکربرج سے ٹریفک گزرنے کیلئے متبادل انتظام کروادیاآج متاثرہ حصہ کی مرمت کاکام شروع کیاجائے گا۔

این ایچ اے

مزید : ملتان صفحہ آخر