(ن) لیگ کا پنجاب اسمبلی سے منظور کردہ آرڈیننس چیلنج کرنے کا اعلان

(ن) لیگ کا پنجاب اسمبلی سے منظور کردہ آرڈیننس چیلنج کرنے کا اعلان

  



لاہور(نمائندہ خصوصی)مسلم لیگ (ن) کا پنجاب حکومت کے پرانی تاریخوں میں منظور کردہ آرڈیننس کو عدالت میں چیلنج کرنے کا اعلان،مسلم لیگ (ن) پنجاب کی ترجمان عظمیٰ بخاری نے کہا وزیر قانون نے پرانی تاریخ میں پنجاب اسمبلی میں آرڈیننس پاس کرائے گئے جس کے خلاف عدالت میں جا رہے ہیں۔خواجہ برادران کی پیشی پر پولیس کا ارکان اسمبلی پر تشدد انتہائی قابل مذمت ہے۔ہر پیشی پر پولیس وکلاء،اراکین اسمبلی اور صحافیوں پر تشدد کرتی ہے۔جب ایم پی ایز نے اسمبلی میں ہونے والے ظلم پر بات کرنی چاہتی تو اجلاس غیر معینہ مدت کے لئے ملتوی کر دیا گیا۔اس حکومت کو شرم و حیا کی ضرورت ہے۔ان خیا لات کا اظہار انہوں نے پنجاب اسمبلی کے باہر میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔عظمیٰ بخاری نے مزید کہا یہ روایت ہو گئی ہے کہ پولیس کو احکامات دئیے جاتے ہیں کہ ورکرز اور ایم پی اے پر تشدد کیا جائے۔میں پوچھنا چاہتی ہوں کہ پاکستان کی کورٹ اب اوپن کورٹ نہیں ہے جہاں سے میڈیا کو نکالا جاتا ہے۔جب ایم پی ایز نے اسمبلی میں ہونے والے ظلم پر بات کرنی چاہتی تو اجلاس غیر معینہ مدت کے لئے ملتوی کر دیا گیا۔وزیر قانون نے پرانی تاریخ میں پنجاب اسمبلی میں آرڈیننس پاس کرائے گئے جس کے خلاف عدالت میں جا رہے ہیں۔قانون سازی کو پنکاب اسمبلی میں بلڈوز کیا جاتا ہے۔حکومت اپوزیشن کی زبان بندی اور گلا دبا چاہتی ہے۔اب تو کہنے کو ملک میں جمہوریت ہے۔

ن لیگ

مزید : صفحہ اول