2ہم جنس پرست باپ، ان کی بیٹی، اور اس کا عاشق، دنیا کے سب سے انوکھے خاندان کی ناقابل یقین کہانی

2ہم جنس پرست باپ، ان کی بیٹی، اور اس کا عاشق، دنیا کے سب سے انوکھے خاندان کی ...
2ہم جنس پرست باپ، ان کی بیٹی، اور اس کا عاشق، دنیا کے سب سے انوکھے خاندان کی ناقابل یقین کہانی

  



لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) لڑکی کو اس کا بوائے فرینڈ دھوکہ دے جائے اور کسی دوسری لڑکی کے ساتھ تعلق قائم کر لے، ایسا تو آئے روز دنیا میں ہوتا ہو گا لیکن آپ یہ سن کر مغربی معاشرے کی جنسی بے راہ روی پر سر پیٹ کر رہ جائیں گے کہ برطانیہ میںایک ایسا انوکھا خاندان ہے جس کے سربراہ دو ہم جنس پرست مرد ہیں اور ان کی ایک بیٹی ہے جس کے بوائے فرینڈ نے اب اسے چھوڑ کر اس کے ایک باپ کو اپنی محبوبہ بنا لیا ہے۔ میل آن لائن کے مطابق اس لڑکی کا نام سیفرون ہے جس کا باپ ’بیری‘ برطانیہ کے ان ہم جنس پرستوں میں سے ایک ہے جس نے ملک میں قانونی طور پر پہلی بار سروگیٹ (متبادل ماں)کے ذریعے اس بیٹی کو جنم دیا۔ بیری نے اپنی تمام زندگی ٹونی نام کے ایک اور مرد کے ساتھ گزاری جو ان دنوں گلے کے کینسر کا شکار ہو کر موت کا انتظار کر رہا ہے۔

بیری اور ٹونی برطانیہ میں ہم جنس پرستوں کی شادی قانونی قرار پانے کے بعد شادی کرنے والے پہلے مردوں میں سے تھے اور بیری اب بھی قانوناً ٹونی کی ’بیوی‘ ہے کیونکہ دونوں کی طلاق نہیں ہوئی۔ ٹونی کی ’بیوی‘ ہوتے ہوئے اس نے اپنی اسی سروگیٹ کے ذریعے پیدا ہونے والی بیٹی سیفرون کے بوائے فرینڈسکاٹ کے ساتھ تعلق قائم کر لیا ہے۔ سکاٹ دراصل بیری کا پرسنل اسسٹنٹ تھا۔ اسی دوران اس کو سیفرون سے محبت ہوئی اور اب وہ سیفرون کو چھوڑ کر اس کے باپ اور اپنے باس بیری کا بوائے فرینڈ بن گیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق بیری اور سکاٹ نے اپنی محبت کا باقاعدہ اعلان بھی کر دیا ہے اور کہا ہے کہ وہ دونوں جلد سروگیٹ کے ذریعے اپنا بچہ پیدا کریں گے۔ سکاٹ عمر میں بیری سے 26سال چھوٹا ہے۔ اس معاملے پر سیفرون کا کہنا ہے کہ ”میرا ایک باپ موت کے منہ میں جا رہا ہے اور دوسرے نے میرے بوائے فرینڈ کے ساتھ تعلق قائم کر لیا ہے۔ اب وہ مجھے ایک اور بہن دینا چاہتا ہے لیکن میں جانتی ہوں کہ اب اس کی عمر زیادہ ہو چکی ہے اور میں اس کی اکلوتی بیٹی ہی رہوں گی۔ وہ اب مزید اولاد پیدا نہیں کر سکے گا۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس