”انتخاب کرنا پڑے تونااہل ایماندار کی بجائے اہل بے ایمان کا کریں کیونکہ ۔۔۔“اوریامقبول جان نے کامیابی کاراز بتادیا

”انتخاب کرنا پڑے تونااہل ایماندار کی بجائے اہل بے ایمان کا کریں کیونکہ ...
 ”انتخاب کرنا پڑے تونااہل ایماندار کی بجائے اہل بے ایمان کا کریں کیونکہ ۔۔۔“اوریامقبول جان نے کامیابی کاراز بتادیا

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)تجزیہ کار اوریا مقبول جان نے کہاہے کہ نا اہل ایماندار او ر بے ایمان اہل میں سے انتخاب کرنا پڑے تو اہل بے ایمان کا انتخاب کریں کیونکہ نا اہلی سے بڑی بے ایمانی کوئی نہیں ہوتی۔

نجی نیوز چینل ک92کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے اوریامقبول جان نے کہا کہ عمران خان کو محسوس ہوجانا چاہئے کہ نیب کو ایک طرف رکھ کرحکومت پر توجہ دیں ، کے پی کا مسئلہ یہ ہے کہ وہاں کامزاج اور طرح کا ہے ، وہا ں قبائلی نظام ہے اور سیاسی مداخلت نہیں ہوتی ۔

انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت کے ساتھ مسئلہ یہ ہواہے کہ یہ کسی کی نہیں سنتے اور خود کو کرکٹ ٹیم سمجھتے ہیں ، کرکٹ ٹیم میں یہ ہوتاہے کہ جب کوئی کھلاڑی ٹھیک نہیں کھیلتا تو کپتان خود اس کی جگہ پر کھڑا ہوجاتاہے لیکن اب عمران خان خود عثمان بزدار کی جگہ نہیں کھڑے ہوسکتے ۔ انہوں نے کہا کہ نا اہل ایماندار او ر بے ایمان اہل میں سے انتخاب کرنا پڑے تو اہل بے ایمان کا انتخاب کریں کیونکہ نا اہلی سے بڑی بے ایمانی کوئی نہیں ہوتی۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور