”کالے بکروں کا صدقہ اور ڈرم میں شکلیں نظر آتی ہیں“ ایاز امیر کاوزیر اعظم سے متعلق دلچسپ انکشاف

”کالے بکروں کا صدقہ اور ڈرم میں شکلیں نظر آتی ہیں“ ایاز امیر کاوزیر اعظم سے ...
”کالے بکروں کا صدقہ اور ڈرم میں شکلیں نظر آتی ہیں“ ایاز امیر کاوزیر اعظم سے متعلق دلچسپ انکشاف

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)تجزیہ کار ایازامیر نے کہاہے کہ مسئلہ یہ ہے عمران پنجاب کوخود کنٹرول کرنے کی کوشش کررہے ہیں لیکن وہ راستہ ہماری نظروں سے اوجھل ہوگیا ہے جوروحانیت کاراستہ ہے جہاں سے پھونکیں ماری جارہی ہیں ، وہ کونسے ڈرم ہیں جہاں سے شکلیں نظریں آتی ہیں،عمران خان کو کسی نے بتایا تھا کہ کالے بکرے ذبح کریں تو کالے بکروں کی شامت آگئی ۔

دنیا نیوز کے پروگرام ”آ ن دا فرنٹ “میں گفتگو کرتے ہوئے ایاز امیر نے کہا کہ ایوب خان کے دور میں ضلع میں سب سے طاقتور ڈپٹی کمشنر ہوا کرتا تھا ۔وہ ایک فرعون قسم کی بیورو کریسی بن چکی تھی اورجب ذوالفقار علی بھٹو کی تحریک چلی تو ایک نعرہ بن چکا تھا کہ ان کی گردنوں سے سریا نکالاجائے ، وہ کوئی ماڈل قسم کی بیورو کریسی نہیں تھی ۔ انہوں نے کہا کہ آج کی بیورو کریسی میں سیاسی مداخلت چودھری پرویز الہٰی اور شہباز شریف کے وزارت اعلیٰ کے ادوار سے کم ہے، مسئلہ یہ ہے کہ عمران پنجاب کوخود کنٹرول کرنے کی کوشش کررہے ہیں لیکن وہ راستہ ہماری نظروں سے اوجھل ہوگیا ہے جوروحانیت کاراستہ ہے جہاں سے پھونکیں ماری جارہی ہیں۔ وہ کونسے ڈرم ہیں جہاں سے شکلیں نظریں آتی ہیں۔عمران خان کو کسی نے بتایا تھا کہ کالے بکرے ذبح کریں تو کالے بکروں کی شامت آگئی اورکسی نے کہا کہ پہاڑوں سے دور رہیں تو وہ کراچی جاکر بیٹھ گئے ، یہ کونسا ملک ہے یہاں کونسی چیزیں ہورہی ہیں؟

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور