”رو رہی تھی تو بیٹی کہہ کر سرپر دشت شفقت رکھا“صوبائی وزیر اجمل چیمہ کا افشاں لطیف کے الزامات پر موقف

”رو رہی تھی تو بیٹی کہہ کر سرپر دشت شفقت رکھا“صوبائی وزیر اجمل چیمہ کا افشاں ...
”رو رہی تھی تو بیٹی کہہ کر سرپر دشت شفقت رکھا“صوبائی وزیر اجمل چیمہ کا افشاں لطیف کے الزامات پر موقف

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)صوبائی وزیر اجمل چیمہ نے کہاہے کہ جب افشاں لطیف رورہی تھی تو میں نے اس کوبیٹی کہہ کر سرپر دست شفقت رکھا تھا ، ایک بھی الزام ثابت ہوجائے تو وزارت چھوڑ دوں گا ۔

اے آروائی نیوز کے پروگرام میں دارالامان کی سپر انٹنڈنٹ افشاں لطیف کے الزامات پر موقف دیتے ہوئے اجمل چیمہ نے کہا کہ میرا کوئی ایسا سٹیٹس نہیں ہے کہ میں افشاں لطیف کے ساتھ گفتگو کروں ، افشاں لطیف نے میرے اوپر جوالزامات لگائے ہیں ، اگر ان میں سے ایک بھی الزام ثابت ہوجائے تو میں وزارت اور اسمبلی رکنیت سے بھی مستعفی ہوجاﺅں گا ۔ انہوں نے کہا کہ میں وضو کرکے آیا ہوں اور کل میں بہت پریشان تھا کیونکہ کل میری والدہ کاختم تھا ۔

اجمل چیمہ کا کہنا تھا کہ یہ واقعہ پانچ ماہ قبل پیش آیا تو کیا میں نے اب پانچ ماہ کے بعد افشاں کو ٹرانسفر کرنا تھا ۔انہوں نے کہا کہ جب یہ رو رہی تھی تو میں نے بیٹی کہہ کران کے سرپر دست شفقت رکھا اور اس نے میرے اوپر الزامات لگادیئے ، پھر ایک حادثہ ہوا تو میں نے ہسپتال جاکر افشاں سے کہا کہ میں آپ کے ساتھ ہوں ، آپ نے گبھرانا نہیں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جب اس کی انکوائری ہورہی تھی تو میں نے جاکر انکوائر ی کرنے والوں سے کہا تھا کہ اس کے ساتھ انصاف کیاجائے ۔

مزید : قومی /اہم خبریں