"ملتان جلسے کو درست ہینڈل نہیں کیاگیا،گرفتاریوں کا کوئی جواز نہیں تھا"شاہ محمودقریشی اپنی ہی حکومت پر برس پڑے

"ملتان جلسے کو درست ہینڈل نہیں کیاگیا،گرفتاریوں کا کوئی جواز نہیں تھا"شاہ ...

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی نے کہا کہ ملتان کے جلسے کو روکنا نہیں چاہیے تھا، میرے خیال میں گرفتاریوں کا کوئی جواز نہیں بنتا،جلسے کوسیاسی طورپر درست ہینڈل نہیں کیا۔  اپوزیشن کو جلسے کرنے دینے چاہئیں، عوام خودفیصلے کریں گے۔ 

وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی نے کہا ہے کہ کورونا کی صورتحال تشویشناک ہے، روزانہ 40 کے قریب کورونا سے اموات ہورہی ہیں۔ اپوزیشن سے جلسےملتوی کرنے کاکہاہے لیکن اپوزیشن لوگوں کی جانوں کوخطرے میں ڈال رہی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ سیاسی طورپرملتان جلسےکودرست ہینڈل نہیں کیا گیا ،قاسم باغ میں جلسے کونہیں روکنا چاہیئے تھا،قاسم باغ میں جلسہ کرتےتویہ لوگ بے نقاب ہوجاتے۔ وزیرخارجہ نے کہا کہ میری رائے میں گرفتاریوں کا کوئی جوازنہیں تھا، پنجاب حکومت اپنے فیصلوں پر نظر ثانی کرے، میں سیاسی قیادت کے ساتھ اپنی رائے شیئر کروں گا۔ 

وزیرخارجہ نے کہا کہ ملکی معیشت بحالی کی طرف جارہی ہے، اپوزیشن ملک میں افراتفری کاماحول پیداکررہی ہے، اپوزیشن کوجلسے کرنے دیئےجائیں عوام خودفیصلہ کریں گے۔ اپوزیشن کا اسمبلی میں رویہ غیرمناسب رہا،اپوزیشن کاواک آؤٹ کرناجمہوری قدروں کےبرعکس ہے۔

وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی نے کہا کہ میں نائجر اجلاس میں تھا پیچھے سے اسرائیل کو تسلیم کرنے کا نیا پراپیگنڈا شروع کر دیا گیا۔ ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم  اسرائیل کے متعلق واضح بیان دے چکے ہیں۔ 

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -