امریکی شخص کی بیوی کی موت حادثہ قرار،کچھ سال بعد دوسری بیوی بھی مر گئی، تحقیقات ہوئیں تو ایسا ہولناک انکشاف کہ روح کانپ اٹھے

امریکی شخص کی بیوی کی موت حادثہ قرار،کچھ سال بعد دوسری بیوی بھی مر گئی، ...
امریکی شخص کی بیوی کی موت حادثہ قرار،کچھ سال بعد دوسری بیوی بھی مر گئی، تحقیقات ہوئیں تو ایسا ہولناک انکشاف کہ روح کانپ اٹھے
سورس: YouTube

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکہ میں ڈیڑھ دہائی قبل ایک شخص کی اہلیہ حادثے کا شکار ہو کر موت کے منہ میں چلی گئی اور اس نے دوسری شادی کر لی۔ دو سال قبل اس نے اپنی اس دوسری بیوی کو قتل کر ڈالا اور اس کیس کی تحقیقات میں یہ ہولناک انکشاف ہوا کہ اس شخص کی پہلی بیوی بھی حادثاتی طور پر نہیں مری تھی بلکہ اسے بھی اس نے خود قتل کیا تھا۔ ڈیلی سٹار کے مطابق اس ملزم کا نام ریکس فورڈ لین کیل ہے، جس کی پہلی بیوی الزبتھ کی موت 2006ء میں امریکی ریاست نارتھ کیرولائنا کے شہر مومیئر میں واقع ان کے گھر کے باہر بنی کنکریٹ کی سیڑھی سے گر کر ہوئی تھی اور اس کی موت کو حادثاتی قرار دے کر کیس بند کر دیا گیا تھا۔

الزبتھ کی موت کے ایک سال بعد ریکس کی ملاقات خود سے 20سال کم عمر ڈیانا الیجنڈرا کے ساتھ ہوئی اور چند سال اکٹھے رہنے کے بعد دونوں نے شادی کر لی۔ 2019ء میں ڈیانا کی لاش ایک مضافاتی علاقے میں واقع جنگل سے ملی جسے بہیمانہ طریقے سے تشدد اور خنجر کے وار کرکے قتل کیا گیا تھا۔ پولیس کو جب لاش ملی اور انہوں نے 59سالہ ریکس کو مشتبہ جانتے ہوئے اسے گرفتار کرنا چاہا تو وہ فرار ہو گیا۔ اس کے گھر سے خنجراور کچھ بندوقیں برآمو ہوئیں۔

 بعد ازاں ریاست ایریزونا میں ریکس کو حراست میں بھی لے لیا گیا۔ دوران تفتیش ریکس نے اپنی پہلی بیوی کو بھی قتل کرنے کا اعتراف کر لیا۔ اس نے بتایا کہ اس نے پہلی بیوی کو انشورنس کی 10لاکھ ڈالر کی رقم حاصل کرنے کے لیے قتل کیا تھا۔ دوسری بیوی ڈیانا کو وہ آئے روز تشدد کا نشانہ بناتا تھا جس پر تنگ آ کر وہ اس سے طلاق لینے جا رہی تھی اور اس مقصد کے لیے وکیل کے ساتھ مشورہ کرر ہی تھی جس پر اس نے اسے بھی قتل کر ڈالا۔ملزم کے خلاف مقدمے کی کارروائی جاری ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -جرم و انصاف -