فرخ حبیب نےپشاورمیں پیپلزپارٹی کے جلسے کو تاریخ کا ناکام ترین جلسہ قراردیا

فرخ حبیب نےپشاورمیں پیپلزپارٹی کے جلسے کو تاریخ کا ناکام ترین جلسہ قراردیا
فرخ حبیب نےپشاورمیں پیپلزپارٹی کے جلسے کو تاریخ کا ناکام ترین جلسہ قراردیا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیر مملکت اطلاعات ونشریات فرخ حبیب نے کہاہے کہ خیبر پختونخواہ کی تاریخ میں اگر کسی جماعت کا ناکام ترین جلسہ ہوا ہے تو وہ پیپلز پارٹی کا ہے،کاش بلاول آج سندھ میں 13سالہ اقتدار کی کارکردگی بھی پیش کر دیتے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان پیپلز پارٹی کے کو چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کے خطاب پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے فرخ حبیب کا کہنا تھا کہ ماضی کے حکمرانوں نے ملک کو لوٹ کر بیرون ملک جائیدادیں بنائیں،آج ماضی کے سارے چور اور کرپٹ لیڈر وزیراعظم عمران خان کے خلاف اکٹھے ہو چکے ہیں ،پیپلز پارٹی کو پشاور میں ناکام ترین جلسے کے بعد اپنی اوقات یاد آ گئی ہو گی ،قوم ان لٹیرے سیاستدانوں کے جھانسے میں دوبارہ نہیں آئیں گے ۔

اس سے قبل معاون خصوصی برائے سی ڈی اے علی نواز اعوان کے ہمراہ پی آئی ڈی میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر مملکت اطلاعات ونشریات  نے کہا کہ ملک بھرمیں سٹیٹ لینڈ کی ڈیجٹلائزیشن کاعمل جاری ہے،سندھ حکومت ہر اچھے کام کی طرح سٹیٹ لینڈ کی ڈیجٹیلائزیشن میں بھی بالکل تعاون نہیں کررہی،سروے کےمطابق پنجاب،خیبرپختونخوا اوربلوچستان میں81 ہزار 209 سکیر کلومیٹر اراضی کی ڈیجیٹلائزیشن ہوچکی،آٹھ لاکھ 24ہزار 210ایکٹر اراضی پر قبضہ ہے،قبضہ شدہ سرکاری اور پرائیوٹ لینڈ کی مالیت 5500ارب بنتی ہے،قیام پاکستان کے بعد عمران خان واحد وزیراعظم ہیں جنہوں نے سٹیٹ لینڈ کا آڈٹ کرانے کا فیصلہ کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کی سرکاری اور پرائیویٹ اراضی ریکارڈ کی اصلاحات تکمیل کےمرحلے میں داخل ہوچکا ہے،ملکی تاریخ میں پہلی مرتبہ کیڈسٹیل میپنگ کے ذریعے لینڈ کی ڈیجٹلائزیش سروے آف پاکستان کررہا ہے، ماضی میں ایک مساوی کو سکین کرکے کہا گیا کہ لینڈ ریکارڈ کمپیوٹرائزڈ ہوچکا ہے، یہ حقیقت کے برعکس تھا، لینڈ ڈیجیٹلائزیشن میں پنجاب، خیبرپختونخوا اور بلوچستان کی حکومتوں نے مکمل تعاون کیا جس سے 88 فیصد لینڈ کی ڈیجٹلائزیش مکمل ہوچکی ہے، سندھ حکومت نے ہر اچھے کام کی طرح اس معاملے میں بھی تعاون نہیں کیا،سندھ حکومت نہیں چاہتی کہ سٹیٹ لینڈ کی پتہ چلے کہ کتنی زمین پر قبضہ ہے، پیپلز پارٹی 13 سال سے سندھ میں حکومت کررہی، چائنہ کٹنگ، سرکاری اراضی پر ملی بھگت سے قبضے کروائے گئے، ریلوے کی 825ایکٹر، سول ایوی ایشن کی 816ایکٹر، متروکہ وقف املاک کی 117ارب اور این ایچ اے کی 52ارب روپے مالیت کی اراضی پر قبضے کی نشاندہی ہوئی ہے۔

مزید :

قومی -