کرتار پور میں فوٹو شوٹ کروانے والی ماڈل گرل صالحہ امتیاز نے معافی مانگ لی

کرتار پور میں فوٹو شوٹ کروانے والی ماڈل گرل صالحہ امتیاز نے معافی مانگ لی
کرتار پور میں فوٹو شوٹ کروانے والی ماڈل گرل صالحہ امتیاز نے معافی مانگ لی

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) سکھوں کے مذہبی مقام گردوارہ کرتار پور صاحب میں ننگے سر فوٹو شوٹ کروانے والی پاکستانی ماڈل گرل صالحہ امتیاز نے معافی مانگ لی۔

انسٹاگرام پر جاری اپنے ایک بیان میں صالحہ امتیاز نے کہا کہ انہوں نے جو تصویر اپنے انسٹاگرام پر پوسٹ کی تھی وہ کسی فوٹوشوٹ کا حصہ نہیں تھی، وہ سکھوں کی تاریخ جاننے کیلئے کرتار پور گئی تھیں۔ یہ تصویر کسی کے جذبات کو ٹھیس پہنچانے کیلئے نہیں کھینچی گئی تھی۔

ماڈل گرل کا مزید کہنا تھا کہ انہوں نے اپنے اس عمل سے بہت سے لوگوں کے دل دکھائے ہیں جس پر وہ معافی مانگتی ہیں۔ وہ سکھ مذہب کا بہت احترام کرتی ہیں اور تمام سکھوں سے معافی چاہتی ہیں۔  ان کی تصاویر صرف یادگار کے طور پر لی گئی تھیں اس سے زیادہ کچھ نہیں ، مستقبل میں وہ ان باتوں کا خیال رکھیں گی اور ایسا کوئی کام نہیں کریں گی۔

خیال رہے کہ کچھ روز پہلے ماڈل گرل صالحہ امتیاز کے کرتار پور کے احاطے میں ننگے سر فوٹو شوٹ کرانے کی تصویر وائرل ہوئی تھی جس پر سکھ کمیونٹی کی جانب سے سخت غم و غصے کا اظہار کیا گیا تھا۔ اس حوالے سے پنجاب اور وفاقی حکومت نے بھی سخت ایکشن لینے کا اعلان کیا تھا۔

مزید :

تفریح -علاقائی -پنجاب -لاہور -