چینی حکومت کے "زیر عتاب" علی بابا گروپ کے بانی جیک ماہ گزشتہ 6 ماہ سے کہاں ہیں؟

چینی حکومت کے "زیر عتاب" علی بابا گروپ کے بانی جیک ماہ گزشتہ 6 ماہ سے کہاں ہیں؟
چینی حکومت کے

  

بیجنگ (ڈیلی پاکستان آن لائن)  چینی ارب پتی اور ای کامرس  گروپ  علی بابا کے بانی جیک ما گزشتہ چھ ماہ سے جاپان کے دارالحکومت ٹوکیو میں مقیم ہیں۔

فنانشل ٹائمز نے ان لوگوں کے حوالے سے رپورٹ کیا ہے جنہیں جیک ما  کے ٹھکانے کا براہ راست علم ہے، کہ جیک ما ٹوکیو سے باہر دیہی علاقے میں موجود ہیں۔ اپنے قیام کے دوران وہ امریکہ اور اسرائیل کے دورے بھی کر چکے ہیں۔  58 سالہ جیک  ما  2020 میں چینی ریگولیٹرز پر تنقید کرنے کے بعدعوام کی نظروں سے غائب ہوگئے تھے۔ ان کے اس بیان کے بعد ان کی کمپنی علی بابا اور  فنانشل سروسز گروپ اینٹ (چیونٹی) دونوں ہی چینی ریگولیٹرز کے زیر عتاب آگئے تھے۔ چینی ریگولیٹرز نے اینٹ کی بلاک بسٹر 37 ارب  ڈالر کی ابتدائی عوامی پیشکش کو منسوخ کر دیا تھا جب کہ علی بابا پر گزشتہ سال عدم اعتماد کی خلاف ورزیوں کے لیے  دو ارب 80 کروڑ  ڈالر کا ریکارڈ جرمانہ کیا تھا۔

جیک ما کا شنگھائی کے قریب شہر ہانگزو میں ایک گھر ہے جہاں علی بابا کا صدر دفتر ہے۔ چینی حکام کے ساتھ ان کے تعلقات خراب ہونے کے بعد سے  جیک  ما کو سپین اور نیدرلینڈز سمیت مختلف ممالک میں دیکھا گیا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -