پیپلز پارٹی کا بلدیہ عظمیٰ کراچی اور تین ڈی ایم سیز کا کنٹرول ایم کیو ایم کے حوالے کرنے کا فیصلہ،نجی ٹی وی کا دعویٰ

پیپلز پارٹی کا بلدیہ عظمیٰ کراچی اور تین ڈی ایم سیز کا کنٹرول ایم کیو ایم کے ...
پیپلز پارٹی کا بلدیہ عظمیٰ کراچی اور تین ڈی ایم سیز کا کنٹرول ایم کیو ایم کے حوالے کرنے کا فیصلہ،نجی ٹی وی کا دعویٰ

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن ) حکومتی اتحادی جماعتوں  پاکستان پیپلز پارٹی اور متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کے درمیان معاملات حتمی  مراحل کی طرف بڑھ رہے ہیں ، نجی ٹی وی کے مطابق 10دسمبرتک بلدیہ عظمیٰ کراچی اور 3ڈسٹرکٹ میونسپل کارپوریشن میں ایم کیو ایم کی مرضی سے ایڈمنسٹریٹر تعینات کردیے جائیں گے۔

 نجی ٹی وی چینل "جیو نیوز "نے ذرائع کے حوالے سے بتایا کہ یہ بات حتمی طور پر طے پا گئی ہے کہ بلدیہ عظمیٰ کراچی اور تین ڈسٹرکٹ میونسپل کارپوریشن کا نظم و نسق ایم کیو ایم کے حوالے کیا جائے گا جہاں وہ اپنی مرضی کے ایڈمنسٹریٹر، میونسپل کمشنر اور افسران کو تعینات کرسکیں گے، اس سلسلے میں متعدد میٹنگز ہوچکی ہیں اور گورنر سندھ کامران ٹیسوری ان میٹنگز میں دونوں فریقین کو رضامند کرنے میں مرکزی کردار ادا کر رہے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق متحدہ قومی موومنٹ نے سیاسی شخصیت کو ایڈمنسٹریٹر کے طور پر تعینات کیا  ہے ، سابق ایم این اے عبدالوسیم کا نام لیا جارہا ہے جب کہ سرکاری افسران میں ڈاکٹر سیف الرحمن، لئیق احمد اور دیگر شامل ہیں ، متحدہ قومی موومنٹ کے سرکردہ رہنما بھی اب یہ کہتے ہوئے نظر آرہے ہیں کہ اگلے دس روز میں ان کی مرضی سے ایڈمنسٹریٹر کراچی کو تعینات کردیا جائے گا، اسی طرح میونسپل کمشنر سید افضل زیدی کو بھی کے ایم سی سے فارغ کیے جانے کا امکان ہے اور توقع کی جا رہی ہے کہ ان کی جگہ بھی ایم کیو ایم کی مرضی سے میونسپل کمشنر تعینات کیا جائے گا۔

مزید :

قومی -علاقائی -سندھ -کراچی -