کرپٹو کرنسی کا ارب پتی تاجر ہیلی کاپٹر حادثے میں مارا گیا

کرپٹو کرنسی کا ارب پتی تاجر ہیلی کاپٹر حادثے میں مارا گیا
کرپٹو کرنسی کا ارب پتی تاجر ہیلی کاپٹر حادثے میں مارا گیا

  

مناکو سٹی(مانیٹرنگ ڈیسک) کرپٹو کرنسی کا ایک اور ارب پتی تاجر ہیلی کاپٹر حادثے میں موت کے منہ میں جا پہنچا۔ میل آن لائن کے مطابق 62سالہ ویاچیسلیف ٹیران نامی اس شخص کا تعلق روس سے تھا۔ اس کے ہیلی کاپٹر نے سوئٹزرلینڈ کے شہر لاﺅزان سے اڑان بھری اور مناکو کی سرحد کے قریب فرانسیسی قصبے ویلے فرنچ سر میر کے قریب گر کر تباہ ہو گیا۔ 

ویاچیسلیف کی اس ناگہانی موت کے متعلق بھی کئی طرح کی افواہیں گردش میں ہیں اور اسے بھی قتل کی واردات قرار دیا جا رہا ہے۔ اس ہیلی کاپٹر میں ایک اور مسافر کو بھی سوار ہونا تھا مگراس نے آخری وقت میں سفر کا ارادہ ترک کر دیا۔ دوسری طرف حادثے کے وقت علاقے میں موسم بہت اچھا اور مطلع بالکل صاف تھا۔ہیلی کاپٹر کا 35سالہ فرانسیسی پائلٹ بھی اس حادثے میں لقمہ اجل بن گیا۔

یہ حالیہ مہینوں میں کرپٹو کرنسی کے تیسرے بڑے سرمایہ کار کی موت ہے۔ چند روز قبل ہی 30سالہ ٹیٹیان کولینڈر نامی کاروباری شخص کی پراسرار طور پر موت واقع ہو گئی تھی۔ وہ اپنے گھر میں نیند کی حالت میں ہی موت کے منہ میں چلے گئے تھے۔ جبکہ چند ہفتے قبل کرپٹو کرنسی کے 29سالہ ارب پتی سرمایہ کار نکولئی مشی جیان پیورٹو ریکو کے ساحل پر سمندر میں ڈوب کر مر گئے تھے۔ 

تینوں ارب پتی افراد کرپٹو کرنسی کے بہت بڑے تاجر تھے۔ ان کی پراسرار حالات میں ہونے والی اموات پر کئی طرح کے شکوک و شبہات ظاہر کیے جا رہے ہیں۔ نکولئی کی موت کے متعلق انٹرنیٹ صارفین کا کہنا ہے کہ انہیں امریکی و اسرائیلی خفیہ ایجنسیوں سی آئی اے اور موساد نے قتل کیا تھا۔

مزید :

بین الاقوامی -