عدلیہ میں ڈیجیٹل ٹیکنالوجی کے استعمال کے فروغ کے لیے کمیٹی کا اجلاس

عدلیہ میں ڈیجیٹل ٹیکنالوجی کے استعمال کے فروغ کے لیے کمیٹی کا اجلاس
عدلیہ میں ڈیجیٹل ٹیکنالوجی کے استعمال کے فروغ کے لیے کمیٹی کا اجلاس

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) عدلیہ میں ڈیجیٹل ٹیکنالوجی کے استعمال کے فروغ کے لیے کمیٹی کا اجلاس ہوا جس کی سربراہی 

سپریم کورٹ کے جسٹس منصور علی شاہ نے کی۔

اجلاس کے اعلامیے کے مطابق  نظام انصاف میں مصنوعی ذہانت اور انفارمیشن ٹیکنالوجی کے استعمال پر غور کیا گیا، اجلاس میں زیر التواء مقدمات کا بوجھ کم کرنے کے لیے انفارمیشن ٹیکنالوجی اور مصنوعی ذہانت کے استعمال کا جائزہ لیا گیا،عدالتی نظام کو آسان، شفاف بنانے اور غیر ضروری تاخیر کی روک تھام کے پہلو کا بھی جائزہ لیا گیا،سائلین کو انصاف کی تیز فراہمی کے لیے مصنوعی ذہانت کے استعمال پر غور کیا گیا۔

جسٹس محمد علی مظہر نے کہا کہ خصوصی عدالتوں اور انتظامی ٹربیونلز کے لیے بھی جامع آٹومیشن پلان مرتب کرنے کی ضرورت ہے۔

نگران وزیرآئی ڈاکٹرعمر سیف نے تجویز پیش کی کہ ٹیکنالوجی کے بہتر استعمال کے لیے ڈیٹا اکٹھا کرنا ہوگا، انہوں نے کہا  کہ عدالتوں کے لیے ڈیٹا ایکسچینج کے لیے معیاری ڈیٹا پالیسی تشکیل دینے کی ضرورت ہے، ڈیٹا کے حصول کے بعد ہی مصنوعی ذہانت کا نظام عدل میں بہتر استعمال ہو سکتا ہے۔

اعلامیے میں مزید کہا گیا کہ نظام عدل کے لیے معیاری ڈیٹا ایکسچینج پالیسی مرتب کرنے کے لیے ذیلی کمیٹی تشکیل دے دی گئی، ذیلی کمیٹی کی حتمی منظوری آئندہ اجلاس میں دی جائے گی۔

مزید :

جرم و انصاف -