نئی دہلی :گائے کے گوشت کی جھوٹی اطلاع دینے پر ہندوسینا کا رہنما گرفتار

نئی دہلی :گائے کے گوشت کی جھوٹی اطلاع دینے پر ہندوسینا کا رہنما گرفتار
نئی دہلی :گائے کے گوشت کی جھوٹی اطلاع دینے پر ہندوسینا کا رہنما گرفتار

  

نئی دہلی(آن لائن) دہلی میں پولیس نے کیرالہ ہاؤس میں گائے کے گوشت کی موجودگی کی غلط اطلاع دینے پر ہندو سینا کے رہنما وشنو گپتا کو گرفتار کرلیا ہے۔ بھارت کے دارالحکومت دہلی میں پولیس نے ہندو سینا کے رہنما وشنو گپتا کو گرفتار کرلیا ہے۔وشنو گپتا کو کیرالہ ہاؤس میں گائے کے گوشت کی موجودگی کی غلط اطلاع دینے پر گرفتار کیا گیا۔ وشنو گپتا نے الزام لگایا تھا کہ دلی میں موجود ریاستی گیسٹ ہاؤس کی کنٹین میں گائے کا گوشت فراہم کیا جاتا ہے جس کے بعد پولیس نے کیرالہ ہاؤس پر چھاپہ مارا تھا لیکن وہاں سے بھینس کا گوشت بر آمد ہوا تھا۔وزیر اعلیٰ کیرالہ اومن چانڈے کا کہنا ہے گیسٹ ہاؤس میں بھینس کا گوشت فراہم کیا جاتا ہے اور دلی میں بھینس کے گوشت پر پابندی نہ ہونے کی وجہ سے پولیس نے کیرالہ ہاؤس پر چھاپہ مار قانون توڑا ہے۔انہوں نے کہا کہ دہلی پولیس غلطی تسلیم کرے ورنہ قانونی چارہ جوئی کی جائے گی۔ کیرالہ کا شمار ان ریاستوں میں ہوتا ہے جہاں گائے ذبح کرنے پر پابندی نہیں۔ پولیس کی طرف سے بغیر اجازت کیرالہ ہاؤس پر چھاپہ مارنے پر ملک کی سیاسی جماعتوں اور سول سوسائٹی نے شدید تنقید کی تھی۔

مزید :

بین الاقوامی -