اس خاتون نے فیس بک پر صوفہ بیچنے کی کوشش کی، پھر کچھ ایسا ہوا کہ جان کر آپ کو سمجھ نہیں آئے گی کہ ہنسنا چاہیے یا رونا چاہیے

اس خاتون نے فیس بک پر صوفہ بیچنے کی کوشش کی، پھر کچھ ایسا ہوا کہ جان کر آپ کو ...
اس خاتون نے فیس بک پر صوفہ بیچنے کی کوشش کی، پھر کچھ ایسا ہوا کہ جان کر آپ کو سمجھ نہیں آئے گی کہ ہنسنا چاہیے یا رونا چاہیے

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) سوشل میڈیا پر لوگوں کے ساتھ مذاق کیا جانا معمول کی بات ہے مگر بعض اوقات یہ مذاق حد سے بڑھ جاتا ہے جس سے مذاق کا نشانہ بننے والے صارف کو مالی نقصان بھی اٹھانا پڑتا ہے۔ ایسا ہی اس برطانوی خاتون ایما ٹیلر کے ساتھ ہوا۔ ایما ٹیلر نے اپنا پرانا صوفہ فروخت کرنے کے لیے فیس بک پر اشتہار دے دیا۔ اس نے پوسٹ میں لکھا کہ ’’آپ میں سے کوئی صوفہ خریدنا چاہتا ہے؟میں اپنا پرانا صوفہ فروخت کرنا چاہتی ہوں، جسے چاہیے ہو وہ سینٹ انیس(St Annes) میں واقع میرے گھر سے جلد از جلد آ کر خرید سکتا ہے۔‘‘

مزیدجانئے: چین کا امیر ترین آدمی جو ایک دن میں 360 ارب روپے گنوا بیٹھا لیکن پھر بھی ایک سال میں دولت میں کتنا اضافہ ہوا؟ جان کر آپ دنگ رہ جائیں گے

یہ اشتہار دینے کے بعد ایما ٹیلر لوگوں کے جوابات کا انتظار کرنے لگی۔ کوئی لوگوں نے اس سے رابطہ کیا مگر سودا طے نہ ہوا۔ تیسرے روز جوکورڈنگلے نامی شخص نے ایما سے رابطہ کیا۔ اس نے کہا کہ میں نے آپ کے صوفے کی تصاویر دیکھی ہیں، یہ مجھے پسند آیا ہے اور میں اسے ایک پراجیکٹ کے لیے خریدنا چاہتا ہوں۔میں اس صوفے کے لیے آپ کی بتائی گئی قیمت سے 20پاؤنڈ زائد رقم دینے کو تیار ہوں، مگر اس پراجیکٹ کے لیے یہ صوفہ درمیان میں سے 2حصوں میں کٹا ہوا چاہیے۔‘‘

مزید جانئے: وہ آدمی جو سال میں ایک دن 100 گاﺅں کا بادشاہ ہوتا ہے لیکن باقی 364 دن ڈھابے پر چائے والا، مگر کیوں؟ ایسی تفصیلات کہ جان کر آپ بھی چکرا کر رہ جائیں گے

خریدار نے ایما سے کہا کہ ’’ اس صوفے کو آری سے کاٹ کر دو ٹکڑے کرو اور ان ٹکڑوں کی تصاویرمجھے بھیج دو تاکہ میں جلد از جلد اسے آ کر خرید سکوں۔‘‘ ایما نے کچھ شک کا اظہار کیا مگر اس شخص نے کہا کہ ’’اعتبار کرو، میں ہر حال میں یہ صوفہ خریدوں گا۔‘‘ ایما ٹیلر نے آری لی اور صوفے کے دو ٹکڑے کر دیئے اور تصاویر جوکورڈنگلے کو بھیج دیں۔اسے تو بس یہی چاہیے تھا۔ اس شخص نے فیس بک پر صوفے کے ٹکڑوں کی تصاویر اپنے دوستوں کے ساتھ شیئر کیں اور اس کی بوسیدگی کا خوب مذاق اڑایا۔ جب ایما کو اصل صورتحال معلوم ہوئی تو اپنا سر پیٹ کر رہ گئی۔آپ بھی فیس بک پر ایسا کچھ کرنے سے پہلے ذہن میں رکھیے کہ ’’فیس بک‘‘ دراصل ایک ایسی دنیا ہے کہ جہاں آپ کے ساتھ بھی ایسا مذاق ہو سکتا ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -