اقوام متحدہ میں ایک قرارداد، دنیا کے تمام ممالک ایک طرف، امریکا کے ساتھ صرف ایک ملک کھڑا رہ گیا، کیا آپ بتاسکتے ہیں یہ کونسا ملک ہوگا؟

اقوام متحدہ میں ایک قرارداد، دنیا کے تمام ممالک ایک طرف، امریکا کے ساتھ صرف ...
اقوام متحدہ میں ایک قرارداد، دنیا کے تمام ممالک ایک طرف، امریکا کے ساتھ صرف ایک ملک کھڑا رہ گیا، کیا آپ بتاسکتے ہیں یہ کونسا ملک ہوگا؟

  

نیویارک (مانیٹرنگ ڈیسک) امریکہ اور اسرائیل کا گٹھ جوڑ کوئی ڈھکی چھپی بات نہیں اور اکثر اوقات ہر معاملے میں ان کے ساتھ اور بھی کچھ ممالک ہاتھ بٹاتے ہیں مگر گزشتہ روز ایک ایسا معاملہ پیش آ گیا کہ ساری دنیا ایک طرف ہو گئی جبکہ امریکہ اور اسرائیل دونوں ایک طرف اکیلے رہ گئے۔ یہ معاملہ کیوبا پر دہائیوں سے عائد پابندیوں کے خاتمے کا تھا۔اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں ایک قرارداد کے ذریعے امریکہ کو کیوبا پر عائد پابندیاں ختم کرنے کا کہا۔ جب قرارداد کے حق یا مخالفت میں ووٹ دینے کا مرحلہ آیا تو پابندیوں کے خاتمے کے حق میں دنیا کے 191ممالک نے ووٹ دیا جبکہ مخالفت میں صرف امریکہ اور اسرائیل کے دو ووٹ آئے۔

مزید جانئے: بینظیرقتل کیس انکوائری،اقوام متحدہ کا پاکستان کو 23 لاکھ ڈالرزواپس کرنےکا فیصلہ

اس طرح کیوبا پر عائد پابندیاں ختم کرنے کی قرارداد متفقہ طور پر منظور کر لی گئی۔اس موقع پر کیوبا کے وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ کیوبا پر کئی دہائیوں سے عائد پابندیوں کا اٹھانا ضروری ہے اور یہ پابندیوں کا خاتمہ گزشتہ چند ماہ کے دوران امریکہ اور کیوبا کے درمیان سفارتی پیش رفت کا نتیجہ قرار دیا جاسکتاہے۔انہوں نے امید ظاہر کی کہ امریکی کانگریس اپنی پالیسی میں تبدیلی لائے گی۔ دوسری طرف امریکی سفیر کا کہنا تھا کہ اگر کیوبا یہ یقین کر رہا ہے کہ وہ ووٹ کے ذریعے امریکا پر دباؤ ڈالنے میں کامیاب ہو جائے گا تو یہ اس کی بہت بڑی بھول ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -