ایمنسٹی انٹرنیشنل کی اسرائیلی فوج کے ہاتھوں نہتے فلسطینیوں کے قتل کی شدید مذمت

ایمنسٹی انٹرنیشنل کی اسرائیلی فوج کے ہاتھوں نہتے فلسطینیوں کے قتل کی شدید ...

  

لندن (این این آئی) انسانی حقوق کی عالمی تنظیم ’’ایمنسٹی انٹرنیشنل‘‘ نے اسرائیلی افواج کے ہاتھوں نہتے فلسطینیوں کے قتل عام کی شدید مذمت کرتے ہوئے عالمی اداروں سے فلسطینیوں کے قتل کی تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے۔اطلاعات کے مطابق انسانی حقوق کی عالمی تنظیم کے لندن میں قائم صدر دفتر سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ صہیونی فوج نہتے فلسطینیوں کیخلاف طاقت کا بے جا استعمال کر رہی ہے۔ صہیونی فوج اور پولیس کا فلسطینیوں کیساتھ ظالمانہ طرز عمل کسی صورت قابل قبول نہیں ہے۔ صہیونی فوج فلسطینیوں کیخلاف طاقت کا استعمال کرکے بیگناہوں کو قتل کررہی ہے۔بیان میں کہا گیا ہے کہ فلسطینی کے مقبوضہ علاقوں غرب اردن اور بیت المقدس میں اسرائیلی فوج کے ہاتھوں حالیہ ہفتوں کے دوران فلسطینیوں کو گولیاں مار کر قتل کرنے کے واقعات کی جامع تحقیقات کی جائیں۔ کیونکہ تنظیم کو ملنے والی اطلاعات میں پتا چلا ہے کہ اسرائیلی فوج دانستہ طورپر غیر مسلح اور نہتے فلسطینیوں کو ان کی جانب سے بغیر کسی خطرے کے شہید کررہی ہے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ اسرائیلی فوج کی جانب سے فلسطینیوں کو گولیاں مارنے اور انہیں فوری طورپر قتل کرنے کے لیے جو جواز فراہم کیے جا رہے ہیں وہ عالمی سطح پر کسی بھی طورپر قابل قبول نہیں ہوسکتے۔ اسرائیلی فوج بغیر سوچے سمجھے جب اور جس فلسطینی پر چاہتی ہے گولیوں کی بوچھاڑ کردیتی ہے۔ اس طرح فلسطینیوں کی اموات میں غیرمعمولی اضافہ ہوا رہا ہے۔انسانی حقوق کی تنظیم نے 26 اکتوبر کو الخلیل شہر میں اسرائیلی فوج کے ہاتھوں شہید کیے گئے نوجوان سعد محمد یوسف الاطرش کی شہادت کو بطور مثال پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ اطرش بالکل غیر مسلح اور بیگناہ تھا۔ اس نے اسرائیلی فوجیوں کے حکم پر جیب سے اپنا شناختی کارڈ نکالنے کیلئے جیب کی طرف ہاتھ بڑھا تو قریب کھڑے ایک فوجی نے اس پر گولیوں کی بوچھاڑ کردی۔ عینی شاہدین نے اس بات کی گواہی دی کہ اطرش کے پاس ایسی کوئی خطرناک شے نہیں تھی اور نہ ہی وہ صہیونی فوج کے لیے خطرے کا باعث تھا۔ایمنسٹی انٹرنیشنل نے کہا کہ کسی بیگناہ فلسطینی کو قتل کرنے سے قبل اسرائیلی فوج کو مکمل طورپر یہ تحقیقات کرنا چاہئیں کہ کون بیگناہ اور کون خطرے کا باعث ہے مگر اسرائیلی فوج ایسی کسی چھان بین کو گوارا نہیں کرتی بلکہ اندھا دھند گولیاں برساتی چلی جاتی ہے۔ اس لئے ایمنسٹی عالمی برادری اور بین الاقوامی تحقیقاتی اداروں سے مطالبہ کرتی ہے کہ وہ اسرائیلی فوج کے ہاتھوں بیگناہ فلسطینیوں کے قتل عام کی تحقیقات کرائیں اور فلسطینیوں کو اسرائیلی مظالم سے بچائیں۔

مزید :

عالمی منظر -