ترقیاتی منصوبوں کے باعث فضائی آلودگی میں اضافہ ،امراض پھیلنے لگے

ترقیاتی منصوبوں کے باعث فضائی آلودگی میں اضافہ ،امراض پھیلنے لگے

  

لاہو(اقبال بھٹی )صوبائی دارالحکومت میں جاری ترقیاتی کاموں کے باعث مختلف علاقوں میں مٹی گرد اور دھول نے شہریوں کا ناک میں دم کر رکھا ہے جابجا کھدائی اور سڑکوں کی تعمیر کے لئے پھینکی گئی مٹی راہ گیروں کو نزلہ زکام کھانسی اور دمہ جیسی بیماریوں میں مبتلا کر رہی ہے جیل روڈ سے گزرنے والے لاکھوں شہری گزشتہ تین ماہ سے اس کرب اور عذاب میں مبتلا ہیں کئی کئی گھنٹے ٹریفک میں پھنسے رہنے کے ساتھ ساتھ مٹی پھانکنا بھی معمول بن گیا ہے سڑکوں کی تعمیر کرنے والے ٹھیکیدارپانی چھڑکنے کی بھی زحمت گوارا نہیں کرتے تفصیلات کے مطابق اورنج لائن میڑو ٹرین منصوبہ جو کہ جی ٹی روڈ سے اسٹیشن میکلورڈ روڈ ،پرانی انار کلی، جین مندر ،چوبرجی سے ٹھوکر نیاز بیگ تک بنایا جارہا ہے اور درجنوں جگہوں پر کام ہو رہا ہے کہیں سڑکوں پر کھدائی کی جا رہی ہے اور کہیں روٹ میں آنے والی عمارتوں کو گھرایا جا رہا ہے جس سے پورا شہر آلودگی کی زد میں ہے جب کے سگنل فری منصوبہ پر بھی پچھلے تین ماہ سے کام ہو رہا ہے جس سے شہر میں کی گئی جابجاکھدائی اور سڑکوں پر ڈالی جانے والی مٹی ٹریفک کی وجہ سے سارا دن اڑتی رہتی ہے جس سے ان منصوبوں کے ارد گرد کے رہائشی اور ان سڑکوں پر لاکھوں کی تعداد سے گزرنے والے راہ گیر بیماریوں میں مبتلا ہو رہے ہیں دوسری طرف سڑکیں بنانے والے ٹھیکدار مٹی کے اوپر پانی پھینکنا تک گوارا نہیں کرتے اور نہ ہی متعلقہ محکمہ کو ہدایت کرتے ہیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -