مہمند ایجنسی میں زلزلہ سے متاثرہ گھروں کی تعداد800 ہوگئی

مہمند ایجنسی میں زلزلہ سے متاثرہ گھروں کی تعداد800 ہوگئی

  

مہمند ایجنسی ( نمائندہ پاکستان ) مہمند ایجنسی، زلزلے سے متاثرہ گھروں کی تعداد 800 تک پہنچ گئی۔ بعض علاقوں میں متاثرہ خاندان تا حال کھلے آسمان تلے زندگی گزار رہے ہیں۔ دویزئی میں 30 ٹینٹ و خوراگی پیکیج تقسیم کئے۔ پاک فوج، ایف سی اور انتظامیہ نے سروے کا عمل تیز کر دیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق مہمند ایجنسی میں حالیہ زلزلے سے اب تک متاثرہ گھروں کی تعداد 800 تک تجاوز کر گئی ہیں۔اس حوالے سے مستحق متاثرین کو بروقت امداد پہنچانے کی غرض سے پاک آرمی، مہمند رائفلز اورمقامی انتظامیہ نے دوبارہ سروے شروع کردیاہے۔ اس سلسلے میں تحصیل صافی کے علاقے ساگی بالا سے رحیم الدین خان نے بتایا کہ ساگی میں گل جان، ابراہیم، اسماعیل، محمد اسلام، محمد اسحاق، آصف ولی کے گھر منہدم جبکہ جان گل کا گھرمنہدم اور 3 گائے بھی ہلاک ہو گئے ہیں۔ اور درجنوں گھروں کو جزوی نقصان بھی پہنچا ہے۔ تحصیل پنڈیالئی سے ابراہیم، بخت منیر، سرتاج خان نے بتایا کہ دویزئی کے شیش محل بوران کور ، صحبت کلے میں درجنوں کی تعداد میں گھر مکمل طور پر گر چکے ہیں۔ جبکہ پچاس تک گھروں کو جزوی نقصان پہنچ چکا ہے۔ پولیٹیکل تحصیلدار پنڈیالئی غنچہ گل خان نے دویزئی کے متاثرین میں 30 ٹینٹ اور خوراکی پیکیج تقسیم کئے جو کہ علاقے میں تباہی کے تناسب سے انتہائی ناکافی ہے۔ مقامی لوگوں نے بتایا کہ جلد از جلد پورے علاقے کا سروے کرکے حقدار متاثرین کو امدادی سامان اورمعاوضہ دیا جائے۔ امدادی چیکس تقسیم کرنے کیلئے انتظامیہ نے جاں بحق اور زخمی افراد کے نام فائنل کئے ہیں۔ جنہیں جلد مالی اور بحالی کا امداد دیا جائیگا۔ بعض علاقوں سے متاثرین کا اندراج سے رہنے کی اطلاعات ہیں۔ جس کیلئے متاثرین نے انتظامیہ سے طریقہ کار وضع کرنے اور اس بارے میں متاثرین کو آگاہ رکھنے کی اپیل کی ہے۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -