چارسدہ ؛ گرلز سکول پر دہشتگردوں کا حملہ ، اہل علاقہ نے مقابلہ کر کے دہشتگردوں کو بھگا دیا

چارسدہ ؛ گرلز سکول پر دہشتگردوں کا حملہ ، اہل علاقہ نے مقابلہ کر کے ...

  

 چارسدہ (بیورورپورٹ) مر دانہ میں گورنمنٹ گرلز پرائمری سکول پر دہشت گردوں کا حملہ ۔اہل علاقہ نے جرات اور بہادری کا مظاہرہ کرکے دہشت گردوں کا حملہ ناکام بنادیا ۔ دہشت گرد کھیتوں میں فرار ۔آرمی ہیلی کاپٹروں کی مدد سے دہشت گردوں کی تلاش۔پاک فوج بھی علاقے میں پہنچ گئی ۔ پولیس تھانے سے 100میٹر فاصلے پر دہشت گردوں کا سکول پر حملہ اور فرار سوالیہ نشان بن گیا ۔ دہشت گردوں نے بعض بچوں کو انجکشن بھی لگا دئیے۔ سکول ہیڈ مسٹریس کا بیان ۔ تفصیلات کے مطابق جمعرات کے روز شبقدر تھانے سے 100میٹر کے فاصلے پر واقعہ گورنمنٹ گرلز پرائمری سکول مر دانہ پر تین دہشت گردوں نے اچانک حملہ کیا ۔اس دوران طالبات نے خوف کے مارے چیخ و پکار شروع کی جس پر اہل علاقہ نے شدید فائرنگ شروع کی اور دہشت گردوں کو سکول سے بھگا دیا ۔ سکول کے ہیڈ مسٹریس مس سلمی کے مطابق ایک دہشت گرد دیوار پھلانگ کر سکو ل کے اندر گھس آیا جس کے بعد دو مزید دہشت گرد سکول کے اندر داخل ہوئے اور انہوں نے بعض بچیوں کو انجکشن لگا نے شروع کئے جبکہ ایک دہشت گرد نے سکول کے کمرے کا تالہ کھولنے کی کو شش کی ۔ اس دوران اندھا دھند فائرنگ شروع ہو ئی جس کے بعد کے واقعات کا ان کو علم نہیں ۔ ذرائع کے مطابق سکول چوکیدار حملے کے وقت موجود نہیں تھے ۔ سکول پر دہشت گردوں کے حملے کی اطلاع پولیس کے دستے اور آرمی کے جوان جائے وقوعہ پر پہنچ گئے اور سکول کا محاصرہ کیامگر دہشت گرد سیکورٹی اداروں کی آمد سے پہلے ہی اہل علاقہ کے شدید فائرنگ سے فرار ہو ئے تھے ۔ بعدازاں آرمی کے دو ہیلی کاپٹروں نے دہشت گردوں کی گرفتاری کیلئے فضائی اپریشن کیا اور انتہائی نیچے پروازیں بھی کئے مگر کوئی کامیابی حاصل نہ ہوئی ۔حساس اداروں اور آرمی کی حصوصی ٹیمیں بھی علاقے میں موجود ہیں اور اس غیر متوقع حملے کے حوالے سے شواہد اکٹھے کر رہے ہیں ۔ ڈی آئی جی سعید وزیر اور ڈی پی او چارسدہ شفیع اللہ خا ن بھی دیگر پولیس افسران کے ہمراہ جائے وقوعہ پر پہنچ گئے اور دہشت گردوں کے حملے کے حوالے سے باریک بینی سے جائزہ لیکر شواہد اکٹھے کئے ۔ ڈی پی او چارسدہ شفیع اللہ خان نے گرلز سکول پر دہشت گردوں کے حملے کے حوالے سے کہاکہ ایک مشکوک شحص نے سکول کی دیوار پھلانگنے کی کو شش کی تھی جس کو ناکام بنایا گیا ہے ۔ واقعہ کے حوالے سے تاحال کوئی ایف آئی آر درج نہیں کی گئی۔ذرائع کے مطابق سکول ہیڈ مسٹریس کے بیان کو تبدیل کرنے کیلئے ان پر شدید دباؤ ڈالا جا رہا ہے تاکہ دہشت گردی کے واقعہ کو ہر صورت چھپایا جا سکے۔ دلچسپ امر یہ ہے کہ مذکورہ سکول شبقدر تھانے سے صر ف100میٹر فاصلے پر واقعہ ہے۔ دہشت گردوں کا سکول پر حملہ اور فرار سے پولیس کے استعداد کار پر کئی سوالات جنم لے رہے ہیں۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -