آل پاکستان سالانہ ختم نبوت کانفرنس چناب نگر کی جھلکیاں

آل پاکستان سالانہ ختم نبوت کانفرنس چناب نگر کی جھلکیاں

  

*۔۔۔کانفرنس کا باقاعدہ آغاز ساڑھے نو بجے آیت خاتم النبیین کی تلاوت اور نعت رسول مقبول ﷺ سے ہوا خانقاہ سراجیہ کندیاں کے سجادہ نشین مولانا صاحبزادہ خواجہ خلیل احمد نے اپنی دعا سے کانفرنس شروع کی۔

*۔۔۔ نائب امیر مرکزیہ مولانا صاحبزادہ خواجہ عزیز احمد نے اپنے افتتاحی خطاب میں کانفرنس کے اغراض و مقاصد بیان کیے اور ملک کے طول و عرض سے آئے ہوئے کارکنوں کی آمد پر خیر مقدمی کلمات ارشاد فرمائے۔

*۔۔۔کانفرنس کاپنڈال میں رنگ برنگے خوبصورت بینروں سے روح پرور منظر پیش کر رہا ہے بینروں پر عقیدہ ختم نبوت کی اہمیت ، ناموس رسالت کے تحفظ پر مبنی عبارات اور پیغامات درج ہیں۔ حکومت سے قادیانی گروہ کے متعلق مطالبات بھی بینروں پر درج تھے۔

*۔۔۔ کانفرنس کے داخلی راستوں پر خوش آمدید کے بینرز آویزاں کئے گئے تھے۔ استقبالیہ کمیٹی اور ان کے رفقاء علماء کرام اور مشائخ عظام کو مکمل احترام کے ساتھ اسٹیج پر لاتے رہے۔

*۔۔۔مولانا محمد اسماعیل شجاع آبادی اپنی استقبالیہ ٹیم کے ساتھ مندوبین مدعوین اور خطباء و شرکاء کے لئے استقبالیہ کیمپ میں پلکیں بچھائے ہوئے تھے جب کہ فوڈ اینڈ واٹر سپلائی کے شعبہ جات کی نگرانی مولانا محمد اسحاق ساقی کر رہے تھے۔

*۔۔۔ کانفرنس کی نقابت و نظامت کے امور مولانا قاضی احسان احمد، مولانا ضیاء الدین آزاد اور مولانا محمد علی صدیقی کے سپرد تھے۔ جو دل نشین اندازمیں اسٹیج سے مقر رین کو دعوت خطاب دیتے رہے۔

*۔۔۔ مولانا محمد قاسم رحمانی اسٹیج سے مقررین کی تقاریر کے اقتباسات میڈیا روم پہنچاتے رہے اور مولانا عبدالحکیم نعمانی میڈیا سیکشن سے صحافیوں کو کانفرنس کی لمحہ بہ لمحہ کاروائی پر بریفنگ دیتے رہے۔

*۔۔۔کانفرنس میں سکول و کالج کے طلباء اور مبصرین کے علاوہ صحافیوں ، میڈیا نمائندوں اور مقامی اخبارات کے ایڈیٹرز کی ایک بڑی تعداد بھی شریک رہی۔

*۔۔۔کانفرنس شروع ہونے سے ایک یوم قبل کارکنوں کے قافلوں کی آمد شروع ہو گئی جو رات گئے تک جاری رہی۔

*۔۔۔چنیوٹ، سرگودھا، جھنگ، فیصل آباداور چناب نگر کے قرب و جوار سے مجاہدین ختم نبوت موٹر سائیکل ریلیوں اور قافلوں کی صورت میں شریک ہوئے۔

*۔۔۔کانفرس کے اسٹیج پر تمام مکاتب فکر کے علماء کرام اور دینی جماعتوں کے قائدین ایک دوسرے سے بغل گیر ہوتے رہے۔ جس سے اسٹیج اتحاد امت کا مثالی منظر پیش کر رہاتھا۔

*۔۔۔کانفرنس کی کوریج اور صحافیوں کی معاونت کے لئے میڈیا گیلری میں مولانا محمد وسیم اسلم ، مولانا عبدالنعیم رحمانی، مولانا رضوان عزیز رفقاء کے ہمراہ تفویض کردہ امور پر مامور تھے۔

*۔۔۔ کانفرنس میں ختم نبوت خط و کتابت کورس اسلام آباد کا بھاری بھرکم وفد بھی شامل ہوا۔

*۔۔۔ کانفرنس کی سیکورٹی پر مامور رضا کاران ختم نبوت نے کانفرنس کے شرکاء کے لئے دید و دل فرش راہ کی عملی تصویر کا نمونہ بنے رہے۔

*۔۔۔ عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے مرکزی ناظم اعلی، مفکر ختم نبوت مولانا عزیز الرحمان جالندھری اپنی پیرانہ سالی کے باوجود بالغ نظری اور خدا داد قائدانہ صلاحیتوں سے کانفرنس کے داخلی اور خارجی معاملات و انتظامات کی سر پرستی و نگرانی فرماتے رہے۔

*۔۔۔ کانفرنس میں استقبالیہ ، میڈیا روم ، فری ڈسپنری ، ساؤنڈ اور لائٹنگ سسٹم ، پارکنگ ، انفارمیشن سینٹر ، فوڈ اینڈ واٹر سپلائی اور ٹریفک پلان جیسے بیسیوں شعبوں کا قیام عمل میں لایا گیا تھا۔

*۔۔۔کانفرنس کے پنڈال کے شرکاء میں دیوبندی، بریلوی، اہل حدیث مکاتب فکر کے لوگ اور ہر شعبہ زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد شریک ہیں۔

*۔۔۔ سابقہ روایات کے پیش نظر امسال بھی کالعدم تنظیموں ، فورتھ شیڈول اور ضلع بندی کے تمام افراد اس کانفرنس میں شریک نہیں ہیں۔

*۔۔۔کانفرنس میں سیکورٹی کے خوبصورت انتظامات دیکھنے میں آئے۔ کانفرنس انتظامیہ اور ضلعی حکومتی سیکیورٹی کے ذمہ داران اپنے اپنے مقرر کردہ پوائنٹس پر چاک و چوبند نظر آئے۔

*۔۔۔ عصر کی نماز کے بعد سوال و جواب کی نشست ہوئی مہمان خصوصی شاہین ختم نبوت مولانا اللہ وسایا تھے جو شرکاء کے تحریری سوالات کے جوابات دیتے رہے۔

*۔۔۔ کانفرنس کے چاروں اطراف کو پولیس اہلکاروں اور انٹیلی جینس حکام نے اپنے گھیرے میں لیا ہوا تھا جب کہ سادہ کپڑوں میں ملبوس پولیس اہلکار بکثرت موجود تھے۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -