کروڑوں کی بے ضابطگیاں ممبران کے فنڈ ز سے لوٹ کھسوٹ اور فراڈ

کروڑوں کی بے ضابطگیاں ممبران کے فنڈ ز سے لوٹ کھسوٹ اور فراڈ

  

لاہور(عامر بٹ سے)کروڑوں روپے کی بے ضابطگیاں،اختیارات کا ناجائز استعمال، ممبران کے فنڈز سے لوٹ کھسوٹ اور فراڈ ،جعلسازی کے نت نئے تجربے کرنے والی ملٹری اکاؤنٹس کوآپریٹو ہاؤسنگ سکیم کی انتظامیہ کے خلاف 2سال سے آپسی ملی بھگت اور ڈھٹائی کے خلاف ملٹری اکاؤنٹس سوسائٹی کے ممبران کی کثیر تعداد سڑکوں پر نکل آئی ،ڈی اوسی کے آفس کا گھیراؤ کر لیا گیا ،اسسٹنٹ رجسٹرار سمیت دیگر افسران موقع سے بھاگ نکلے،رجسٹرار پنجاب نے متاثرین کی آہ بکا کا نوٹس لے لیا ،فوری طور پر ایکشن رپورٹ مرتب کرنے اور زیر التواء درخواستوں کو نمٹانے کی ہدائت کردی گئی ،مزید معلوم ہواہے کہ محکمہ کوآپریٹو کے زیرنگرانی کام کرنے والی ملٹری اکاؤنٹس کوآپریٹو سوسائٹی کی انتظامیہ کے خلاف قبرستان کی زمین فروخت کرنے ۔پارکس کمیونٹی سنٹر اور دیگر رفاع عامہ کے لئے مختص کی جانے والی زمینوں کی بندر بانٹ کرنے ،بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کے خرید کردہ پلاٹس جعلسازی سے بیچنے ،ری الاٹمنٹ کے ذریعے خفیہ طور پر من پسند افراد میں پلاٹس کی تقسیم کرنے اور سیل شدہ بنک اکاؤنٹس میں محکمہ کوآپریٹو کے افسران سے ساز باز کرکے سوسائٹی ممبران کے کروڑوں روپے کے فنڈز نکلوائے جانے پر گزشتہ 2سالوں کے دوران 200سے زائد درخواستیں دائر کی گئی تاہم ایک ایک درخواست پر الگ الگ سے ڈی سی او آفس میں تعینات افسران نے ساز باز کی جس کی تمام تر اطلاعات اور ریکارڈ بھی ڈی سی او آفس میں موجود ہے گزشتہ دو سالوں کے دوران ملٹری اکاؤنٹس کوآپریٹو سوسائٹی میں کروڑوں روپے کے گھپلے کی نشاندہی اور واضح ثبوت فراہم کئے جانے کے باوجود محکمہ کوآپریٹو کی جانب سے کوئی کاروائی نہ کی گئی ہے بلکہ ان کو مختلف تاخیر ی حربوں سے التواء کا شکار بنایا گیا اور سوسائٹی انتظامیہ سے اپنے مفادات پورے کئے گئے جس کے نتیجے میں متعدد درخواست گزار مایوسی سے گھربیٹھ گئے ،متعدد سوسائٹی انتظامیہ کے آگے گھٹنے ٹیک کر ان کے ساتھ جا ملے اور درجنوں اس ملک کو ہی خیر آؓباد کہہ گئے ،ملٹری اکاؤنٹس سوسائٹی کے سینکڑوں ممبران ڈی سی او آفس کی جانب سے انتظامیہ کو دیئے جانے والے تحفظ اور لاقانونیت پر مبنی اقدام کو سپورٹ کئے جانے پر سراپا احتجاج بن چکے ہے ،گزشتہ روز ملٹری اکاؤنٹس کوآپریٹو سوسائٹی کے ایک سو سے زائد ممبران نے ڈسٹرکٹ آفیسر لاہور اور اسسٹنٹ رجسٹرار چوہدری محمد وقاص کے خلاف شدید احتجاج کیا اور ہجوم کی صورت میں ڈی او سی آفس کا گھیراؤ کر لیا اور کوآپریٹو کے انتظامی افسران اور ملٹری اکاؤنٹس سوسائٹی انتظامیہ کی آپسی ملی بھگت کے خلا ف شدید نعرے بازی کی جس کے نتیجے میں اسسٹنٹ رجسٹرار چوہدری محمد وقاص سمیت دیگر انتظامی افسران بھی موقع سے روپوش ہو گئے جبکہ مظاہرین کی کثیر تعداد پیدل مارچ کرتے ہوئے رجسٹرار کوآپریٹو پنجاب نعیم اقبال بخاری کے آفس جا پہنچی جس پر رجسٹرار کوآپریٹو پنجاب نے ڈی او سی لاہور کو چودہ دن کے اندر انسپکشن رپورٹ مرتب کرنے کی ہدائت کر دی مٖظاہرین کا کہنا تھا گزشتہ تین سال کا عرصہ گزرجانے کے باوجود کوئی قانونی کاروائی عمل میں نہ لائی جارہی ہے اگر چند روز میں انصاف نہ ملا تو ملٹری اکاؤنٹس سوسائٹی انتظ میہ اور کوآپریٹو انتظامیہ کے خلاف دما دم مست قلندر ہو گا ،ممبران کی کثیر تعداد نے سیکریٹر ی کو آپریٹو پنجاب بابر حیات اور ڈی جی اینٹی کرپشن پنجاب انور رشید سے مطالبہ کیا ہے وہ ملٹری اکاؤنٹس کوآپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی میں ہونے والی بے ضابطگیوں اور کرپشن کا نوٹس لیں جبکہ محکمہ کوآپریٹو کی ان کالی بھیڑوں کے خلاف بھی سخت کاروائی عمل میں لائیں جو کہ ملٹری کاؤنٹس سوسائٹی انتظامیہ کو تحفظ فراہم کرتے ہوئے ان کی کرپشن میں برابر کی حصہ دار بن چکی ہے ، دوسری جانب ملٹری اکاؤنٹس سوسائٹی کی انتظا میہ نے ان الزامات کی تردید کی ہے ۔رجسٹرار کوآپریٹو پنجاب نعیم اقبال بخاری نے کہا ہے کہ ملٹر ی اکاؤنٹس سوسائٹی کے ممبران کو فوری اور سستا انصاف مہیا کرنے کی ہر ممکن کوشش کی جائے گی،زمہ داران کے خلاف قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔

ملٹری اکاؤنٹس

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -