صوابی ، پارٹی وفادری تبدیل کرنے پر مسلم لیگ ن کی خاتون کونسلر نااہل قرار دیدی گئی

صوابی ، پارٹی وفادری تبدیل کرنے پر مسلم لیگ ن کی خاتون کونسلر نااہل قرار دیدی ...

  

 صوابی( بیورورپورٹ)الیکشن کمیشن آف پاکستان نے تحصیل لاہور کے نظامت اور نائب نظامت کے انتخابات میں پارٹی وفاداری تبدیل کر نے والی مسلم لیگ ن کی خاتون تحصیل کونسلر مسماۃ نور جہان کو نا اہل قرار دیدیا۔ گذشتہ ماہ ہونے والے انتخابات میں نور جہان تحصیل کونسلر نے اپنی اور اتحادی جماعتوں کے مشترکہ امیدواروں برائے تحصیل نظامت ن لیگ کے فہیم خان اور نائب نظامت امیدوار اے این پی کے محمد اسد زمان شیر کے حق میں ووٹ دینے کی بجائے مخالف پینل کے امیدواروں تحصیل ناظم سہیل خان تورڈھیر اور نائب ناظم شہاب علی کے حق میں ووٹ استعمال کیا تھا۔ الیکشن کمیشن اور لوکل گورنمنٹ ایکٹ کی خلاف ورزی کر نے اور پارٹی وفاداری تبدیل کر نے پر مسلم لیگ ن ضلع صوابی کے صدر افتخار احمد خان نے تحصیل کونسلر ن لیگ کی مسماۃ نور جہان کے خلاف الیکشن کمیشن آف پاکستان میں رٹ دائر کر دی جس میں انہوں نے موقف اختیار کیا تھا کہ مسماۃ نور جہان مسلم لیگ ن کی ٹکٹ پر منتخب ہوئی تھی اور بعد ازاں پارٹی وفاداری تبدیل کر کے مخالف امیدوار کے حق میں ووٹ استعمال کیا درخواست گزار کی جانب سے اس کیس کی پیروی ممتاز قانون دان محمد اشفاق خان ایڈوکیٹ نے کی۔ کمیشن نے دونوں فریق کے دلائل سن کر سماعت مکمل ہونے پر تحصیل کونسلر نور جہان کو نا اہل قرار دیا ان کی نا اہلی سے اب تحصیل کونسل لاہور میں اپوزیشن کے ارکان کی تعداد آٹھ جب کہ حامی ارکان کی تعداد نو ہو گئی ۔ جب کہ اس الیکشن میں جے یو آئی کے منتخب تحصیل کونسلر شہاب علی بھی پارٹی وفاداری تبدیل کر کے اس کے بدلے تحصیل کونسل لاہور کے نائب نظامت پر فائز ہو چکے تھے۔تاہم ان کے خلاف جماعتی سطح پر تاحال فیصلہ نہیں ہوا ہے عدالتی فیصلوں اور دوبارہ الیکشن کے بعد اپوزیشن کے ووٹوں کی تعداد دس ہو گی۔اور نا اہلی کے بعد الیکشن میں حالیہ ارکان کی تعداد آٹھ جب کہ اپوزیشن کی تعداد دس ہو کر اپوزیشن کو حکومت سازی کا موقع مل جائیگا#

مزید :

پشاورصفحہ آخر -