متحدہ مجلس عمل کی بحالی پر اتفاق طریقہ کار پر اختلافات ہے ،ساجد نقوی

متحدہ مجلس عمل کی بحالی پر اتفاق طریقہ کار پر اختلافات ہے ،ساجد نقوی

  

ڈیرہ اسماعیل خان(بیورورپورٹ)شیعہ علماء کونسل کے قائد علامہ سیدساجدعلی نقوی نے کہاہے کہ ہماراموقف رہاہے کہ ہرمسلک کااحترام کیاجائے ۔اہل تشیع کے ماتمی جلوسوں کی راہ میں رکاوٹیں کھڑی کی گئیں۔سیلاب سے متاثرہ افرادسے ہمدردی کااظہارکرتے ہیں ا ورحکومت سے انکی بحالی کامطالبہ کرتے ہیں۔کشمیریوں کے حق خودارادیت کی مکمل حمایت کرتے ہیں۔ملک میں شیعہ سنی کاکوئی جھگڑانہیں۔ان خیالات کااظہارانہوں نے کوٹلی امام حسین میں منعقدہ پریس کانفرنس کے دوران کیا۔اس موقع پر شیعہ علماء کونسل کے مرکزی رہنماعلامہ رمضان توقیر ودیگربھی موجودتھے۔علامہ سیدساجدعلی نقوی نے کہاکہ بولان بلوچستان اورجیکب آباد کے واقعات سنگین ہیں۔یہ واقعات ایک سوالیہ نشان ہیں۔انہوں نے کہاکہ خودکش کہاں سے تربیت حاصل کررہے ہیں۔انکی سرپرستی اورفنڈنگ کون کررہاہے۔عزاداری کسی مسلک کیخلاف نہیںیہ ہماراحق ہے۔ایف آئی آرکسی مجلس یاجلوس کیخلاف نہیں کی گئیں بلکہ مسلک اہل تشیعہ کیخلاف کی گئیں ہیں۔علامہ سیدساجدعلی نقوی نے کہاکہ متحدہ مجلس عمل کی بحالی کیلئے رضامندہیں۔اسکے طریقہ کارپرصرف اختلاف ہے۔انہوں نے کہاکہ خیبرپختونخواہ کی تحریک انصاف کی حکومت کاایک گروہ کے حوالے سے نرم رویہ ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -