ایف ای سی ایچ ایس 31دسمبر تک ملازمین کو پلاٹوں کا قبضہ دے،مرتضی جاوید

ایف ای سی ایچ ایس 31دسمبر تک ملازمین کو پلاٹوں کا قبضہ دے،مرتضی جاوید

  

اسلام آباد(نمائندہ خصوصی)قائم مقام سپیکر قومی اسمبلی مرتضیٰ جاوید عباسی نے فیڈرل ایمپلائیز کو آپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی (FECHS )کی انتظامیہ کی طرف سے قومی اسمبلی کے ملازمین کو پلاٹوں کا قبضہ دینے میں تاخیری حربے استعمال کرنے پر سخت برہمی کا اظہارکیا ہے ۔ انہوں نے FECHSکو 31دسمبر تک قومی اسمبلی کے ملازمین کو تمام 1093 پلاٹوں کا قبضہ دینے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ FECHS کی انتظامیہ اپنی 10ستمبر ،2015کو کمیٹی کے ہونے والے اجلاس میں کرائی جانے والی یقین دہانی کو پورا کرنے میں ناکام ہوگئی ہے اور قومی اسمبلی کے ملازمین کو پلاٹوں کے قبضہ دینے میں لیت و لال سے کام لے رہی ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے قومی اسمبلی کی ہاؤس اینڈ لائبریری کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا جو آج پارلیمنٹ ہاؤس میں منعقد ہوا۔ یا د رہے کہ FECHS کے صدر اور انتظامیہ نے کمیٹی کے گزشتہ اجلاس میں یقین دہانی کرائی تھی کہ 1093 پلاٹوں میں سے 287 پلاٹ 31ستمبر تک اور باقی ماندہ پلاٹوں کا قبضہ 31دسمبر 2015 تک قومی اسمبلی کے ملازمین کو دیا جائے گا جنہوں نے پلاٹ کی پوری قیمت جمع کرادی ہے ۔ قائم مقام سپیکر نے کہا کہ FECHS کی انتظامیہ نے کمیٹی کو کرائی گئی یقین دہانی کو پورا نہ کرکے انہیں سخت مایوس کیا ہے اورکمیٹی کوFECHS انتظامیہ کے اس طرز عمل کی وجہ سے ملازمین کے سامنے خفتگی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ مسئلہ 1988 سے چلا آرہا ہے اور ملازمین کو باوجود اس کے کہ انہوں نے پلاٹ کے لیے پوری رقم جمع کروادی ہے اب تک انہیں یہ پلاٹ نہیں مل سکے ۔انہوں نے کہا کہ ملازمین کو ان کی محنت کی کمائی سے محروم کرنے کی کسی کو اجازت نہیں دی جائے گی۔ انہوں نے صدر FECHS کو کمیٹی کو کرائی گئی یقین دہانی کو پورا کرنے اور ملازمین کو جلد ازجلد پلاٹوں کا قبضہ دینے کی ہدایت کی۔ قائم مقام سپیکر نے ایڈمنسٹریٹر قومی اسمبلی سیکریٹریٹ ایمپلائیز کو آپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی (NAECHS) کی طرف سے FECHS انتظامیہ کو 1093 کے بجائے 1700 پلاٹ کے فنڈ ٹرانسفر کرنے پر بھی سخت برہمی کا اظہار کیا اور اسلام آباد انتظامیہ کو اس پوری معاملے کی نگرانی کرنے کی بھی ہدایت کی۔بعد ازاں صدر FECHS نے سوسائٹی میں ہونے والے ترقیاتی کاموں سے آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ 226پلاٹوں پر ترقیاتی کام مکمل ہوچکا ہے جس کا قبضہ دیا جا سکتا ہے۔ انہوں نے کمیٹی کو یقین دلایا کہ بقایا پلاٹوں پر بھی ترقیاتی کام جاری ہے اور مقررہ مدت کے اندر ملازمین کو ان کا قبضہ دیا جائے گا۔ قائم مقام سپیکر نے صدر FECHS کو 226پلاٹوں کا فوری قبضہ دینے کی ہدایت کی۔ اجلاس میں اراکین پارلیمنٹ میاں محمد رشید، عاقب اللہ خان ، ڈاکٹر مہرین رزاق بھٹو ، مولانا قمر الدین کے علاوہ قومی اسمبلی سیکریٹریٹ اور اسلام آباد انتظامیہ کے اعلیٰ افسران نے شرکت کی۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -