لاہور ہائیکورٹ نے میڈیا کو بلدیاتی انتخابات کے غیر سرکاری نتائج جاری کرنے کی مشروط اجازت دیدی

لاہور ہائیکورٹ نے میڈیا کو بلدیاتی انتخابات کے غیر سرکاری نتائج جاری کرنے کی ...
لاہور ہائیکورٹ نے میڈیا کو بلدیاتی انتخابات کے غیر سرکاری نتائج جاری کرنے کی مشروط اجازت دیدی

  

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) لاہور ہائیکورٹ نے میڈیا کو بلدیاتی انتخابات کے غیر سرکاری اور غیر حتمی نتائج جاری کرنے کی مشروط اجازت دیدی ہے اور کہا ہے کہ میڈیا پولنگ ختم ہونے کے ایک گھنٹے بعد نتائج جاری کرنا شروع کرے اور سنسنی نہ پھیلائے۔ جسٹس فرخ عرفان نے کیس کی سماعت کے دوران ریمارکس دیئے کہ میڈیا اپنے فرائض ادا کر سکتا ہے۔

تفصیلات کے مطابق انتخابی نتائج کے اعلان سے متعلق میڈیا پر پابندی کے خلاف دائر درخواست کی سماعت ہوئی۔ درخواست گزار چوہدری اشتیاق احمد ایڈووکیٹ نے موقف اختیار کیا تھا کہ الیکشن کمیشن کا ضابطہ اخلاق آئین کے آرٹیکل 19 اے کے منافی ہے اور الیکشن کمیشن میڈیا کو فرائض کی ادائیگی سے نہیں روک سکتا، عدالت نتائج کے میڈیا پر دکھانے کی پابندی کو کالعدم قرار دے۔

عدالت نے کارروائی نماز جمہ کے بعد تک ملتوی کی جس کے بعد دوبارہ سماعت کا آغاز کیا گیا اور عدالت نے اس معاملے پر الیکشن کمیشن سے وضاحت طلب کی۔ عدالت نے ریمارکس دیئے کہ آئین اطلاعات تک رسائی کے بنیادی حق کو تحفظ دیتا ہے اس لئے اطلاعات تک رسائی پر پابندی کیسے لگائی جا سکتی ہے؟ عدالت نے درخواست پر فیصلہ سناتے ہوئے میڈیا کو بلدیاتی انتخابات کے غیر سرکاری و غیر حتمی نتائج جاری کرنے کی مشروط اجازت دیتے ہوئے کہا ہے کہ نتائج جاری کرتے وقت سنسنی پھیلانے سے گریز کیا جائے۔

مزید :

لاہور -اہم خبریں -