بیٹے نے اپنی ماں کو قتل کرکے 3 سال تک لاش گھر میں ہی چھپائے رکھی، وجہ ایسی ہولناک کہ انسانیت شرمندہ ہوجائے

بیٹے نے اپنی ماں کو قتل کرکے 3 سال تک لاش گھر میں ہی چھپائے رکھی، وجہ ایسی ...
بیٹے نے اپنی ماں کو قتل کرکے 3 سال تک لاش گھر میں ہی چھپائے رکھی، وجہ ایسی ہولناک کہ انسانیت شرمندہ ہوجائے

  

ماسکو(مانیٹرنگ ڈیسک) دولت و جائیداد کا لالچ انسان کا خون سفید کر دیتا ہے اور بسا اوقات وہ ہوسِ زر میں اندھا ہو کر اپنے ہی ماں باپ پر ظلم ڈھانے سے باز نہیں آتا۔ ایسا ہی اس روسی شخص نے کیا۔ 60سالہ ولادی میر لیوندوف نے اپنی بوڑھی ماں کو قتل کر کے اس کی لاش گھر میں چھپا کر رکھ لی اور کسی رشتے دار یا ہمسائے کو اس کی موت کی بھنک نہیں پڑنے دی تاکہ وہ مزید تین سال تک اس کی پنشن کی رقم وصول کرتا رہے جو ماہانہ 16ہزار روبل (تقریباً26ہزار 300روپے )تھی۔

مزید جانئے: ایک بچہ جو بغیر دماغ کے زندہ ہے، معجزاتی واقعے نے ڈاکٹر کو بھی چکرا کر رکھ دیا

اس شخص نے لوگوں کو دھوکہ دینے کے لیے ماں کی ایک ڈمی بنا کر اور اسے ماں کے کپڑے پہنا کر روزانہ بالکونی میں بٹھا دیتا تاکہ ہمسائے یہ سمجھیں کہ اس کی ماں زندہ ہے۔ اس شخص نے ماں کی لاش کو نمک لگا کر محفوظ کرنے کی کوشش کی مگر اناڑی پن کے باعث وہ اسے محفوظ کرنے میں ناکام رہا اور سڑنے کا عمل شروع ہونے پر لاش سے بدبو آنے لگی۔ ہمسایوں نے شدید تعفن پھیلنے پر پولیس کو اطلاع دے دی۔ پولیس نے آ کر جب گھر کی تلاشی لی تو اس کی ماں کی لاش برآمد ہو گئی۔ پولیس نے ملزم کو گرفتار کرکے اس کے خلاف مقدمہ درج کر لیاہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -