ریحام خان پارٹی پر کنٹرول چاہتی تھیں،معاملہ ختم کرنے کا فیصلہ عمران کے چار دوستوں نے کیا جس میں بہنیں بھی شریک تھیں، عارف نظامی

ریحام خان پارٹی پر کنٹرول چاہتی تھیں،معاملہ ختم کرنے کا فیصلہ عمران کے چار ...
ریحام خان پارٹی پر کنٹرول چاہتی تھیں،معاملہ ختم کرنے کا فیصلہ عمران کے چار دوستوں نے کیا جس میں بہنیں بھی شریک تھیں، عارف نظامی

  

لاہور ( مانیٹرنگ ڈیسک)ممتاز تجزیہ نگار اور سینئر صحافی عارف نظامی کا کہنا ہے کہ عمران خان اور ریحام خان میں طلاق کا فیصلہ 48گھنٹوں میں ہوا۔خان صاحب کافی عرصہ سے یہ سلسلہ ختم کرنا چاہتے تھے۔ انہوں نے کہا تھا کہ اکتوبر میں ریحام خان کو فارغ کردوں گا۔ریحام خان کی طرف سے لندن کی میڈیا کانفرنس میں جانے کی ضد پر معاملات بگڑے۔جیسے ہی ریحام لندن پہنچیں عمران خان نے طلاق کا اعلان کر دیا۔ چینل 24سے گفتگو کرتے ہوئے عارف نظامی نے دعوی کیا کہ ایک بار عمران خان سے ریحام نے کہا کہ پارٹی میں چلاونگی اور آپ کا فون بھی میں ہی سنا کرونگی ۔اس طرح وہ پارٹی پر اپنا پورا کنٹرول چاہتی تھیں۔ عارف نظامی نے مزید کہا کہ ان حالات میں خان صاحب کے قریبی چار دوستوں نے فیصلہ کیا کہ اب اس معاملے کو ختم کر دیا جائے۔اس فیصلے میں ان کی بہنیں بھی شامل تھیں۔ عارف نظامی نے کہا کہ عمران کے بچے اور ان کی بہنیں اس شادی پر خوش نہ تھے۔ جب ایک کانفرنس میں شرکت کیلئے ریحام خان لندن پہنچیں تو ان کو طلاق کا پروانہ دیدیا گیاجس پر ریحام حیران رہ گئیں۔ریحام خان کو لندن سیٹل کرنے کی تجویز بھی ہے۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -