’تم ہمارے ملک میں آجاؤ‘ بھارت نے ایک ایسے شخص کو دعوت دے دی کہ چین کا غصہ آسمان پر پہنچ گیا

’تم ہمارے ملک میں آجاؤ‘ بھارت نے ایک ایسے شخص کو دعوت دے دی کہ چین کا غصہ ...
’تم ہمارے ملک میں آجاؤ‘ بھارت نے ایک ایسے شخص کو دعوت دے دی کہ چین کا غصہ آسمان پر پہنچ گیا

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک)بھارت نے گویا قسم کھا رکھی ہے کہ وہ اپنے کسی ہمسائے کو سکھ کا سانس نہیں لینے دے گا۔ اب بھارت سرکار نے چین کی ناراضگی اور تحفظات کو یکسرفراموش کرتے ہوئے جلاوطن بدھ رہنماء دلائی لامہ کو متنازعہ ریاست اروناچل پردیش کے دورے کی دعوت دے دی ہے جو دلائی لامہ نے قبول بھی کر لی ہے۔ دلائی لامہ کے ترجمان تنزین تیکلا کا کہنا ہے کہ ’’دلائی لامہ آئندہ سال مارچ کے دوسرے ہفتے میں اروناچل پردیش کا دورہ کریں گے۔‘‘

ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ کے مطابق اروناچل پردیش کے وزیراعلیٰ پیما کھنڈو نے دلائی لامہ کو دورے کی دعوت دی تھی۔ اس حوالے سے بھارتی وزارت خارجہ کے ترجمان وکاس سورپ کا کہنا تھا کہ ’’بدھ مت کے رہنماء دلائی لاما’’بھارت کے مہمان‘‘ ہوں گے اور انہیں پورے ملک میں کہیں بھی جانے کی اجازت ہو گی۔ وہ محترم روحانی شخصیت ہیں اور اروناچل پردیش میں بڑی تعداد میں ان کے پیروکار موجود ہیں۔ وہ ماضی میں بھی اس ریاست کا دورہ کر چکے ہیں لہٰذا اس بار بھی ان کا دورہ کوئی خلاف معمول بات نہیں۔‘‘

’روس عرب دنیا کے بعد اس اہم ترین علاقے پر بھی قبضہ کررہا ہے‘ ایسا انکشاف کہ مغربی دنیا کی نیندیں اُڑگئیں، وہ کام ہوگیا جو امریکہ نے بھی نہ سوچا تھا

یاد رہے کہ اروناچل پردیش چین کے علاقے تبت کا حصہ ہے۔ یہ علاقہ دونوں ممالک کے درمیان متنازعہ خطہ ہے اور بھارت پہلے بھی مختلف عالمی رہنماؤں کو یہاں کا دورہ کروا کر چین کو زچ کرتا آر ہا ہے۔ رواں ماہ کے آغاز میں بھارت نے چینی سفیر رچرڈ ورما کو بھی اروناچل پردیش کا دورہ کروایا تھا جس پر چین نے شدید تحفظات کا اظہار کیا تھا۔ امریکی سفیر کے دورے پر چین کا کہنا تھا کہ ’’امریکہ کو بھارت اور چین کے ارضیاتی تنازع میں مداخلت سے گریز کرنا چاہیے اور امید ہے کہ بھارت آئندہ ایسا کوئی اقدام نہیں اٹھائے گا جس سے دونوں ملکوں کے تعلقات کشیدہ ہوں۔‘‘

مزید : بین الاقوامی