اترپردیش، ملائم سنگھا ر اور ان کے بیٹے میں اختلافات، سماج وادی پارٹی دو حصوں میں تقسیم

اترپردیش، ملائم سنگھا ر اور ان کے بیٹے میں اختلافات، سماج وادی پارٹی دو حصوں ...
اترپردیش، ملائم سنگھا ر اور ان کے بیٹے میں اختلافات، سماج وادی پارٹی دو حصوں میں تقسیم

  

نئی دہلی (ویب ڈیسک) بھارت کی سب سے بڑی ریاست اترپردیش میں ملائم سنگھ یادو کی علاقائی جماعت سماج وادی پارٹی تقریباً 30 برس سے ریاست کی سیاست کا محور بنی ہوئی ہے ، اس میں پارٹی کے صدر ملائم سنگھ یادو کے خاندان کے 20 سے زائد ارکان اسمبلی اور پارلیمنٹ کے رکن، وزیر اور دوسرے اہم سرکاری عہدوں پر فائز ہیں۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

ریاست میں انتخابات ہونے والے ہیں اور انتخابی مہم شروع ہونے سے پہلے یادو خاندان میں پھوٹ پڑگئی ہے اور ملائم سنگھ اور ان کے بیٹے اکھلیش یادو کے درمیان زبردست اختلاف پیدا ہوگیا ہے۔ پارٹی دو حصوں میں تقسیم ہوتی ہوئی محسوس ہورہی ہے۔ اترپردیش میں ملائم سنگھ یادو اور بہار میں لالو پرساد کی ساست کا دور اب مندمل ہوتا ہوا محسوس ہورہا ہے۔ بدلتے ہوئے سیاسی پس منظر میں ان رہنماﺅں کا دور ختم ہوچکا ہے ۔ تمل ناڈو میں اے آئی ڈی ایم کے کی رہنما جیاللتا دو مہینے سے ہسپتال میں ہیں۔

مزید : بین الاقوامی