سب کا احتساب ضروری لیکشن انتقام کی پالیسی غلط ، پی پی رہنما

سب کا احتساب ضروری لیکشن انتقام کی پالیسی غلط ، پی پی رہنما

ملتان ( نیوز رپورٹر)پاکستان پیپلزپارٹی جنوبی پنجاب کے صدر و سابق گورنر پنجاب مخدوم سید احمد محمود، پیپلزپارٹی جنوبی پنجاب کے سینئر نائب صدر خواجہ رضوان عالم، پیپلزپارٹی(بقیہ نمبر38صفحہ12پر )

جنوبی پنجاب کی جنرل سیکرٹری نتاشہ دولتانہ، پیپلزپارٹی فیڈرل کونسل کے ممبر عبدالقادر شاھین نے مشترکہ بیان میں کہا ہے کہ 70 دنوں کے بعد بھی حکومت اپنی غلط پالیسیوں اور ہٹ دھرمیوں کی بنا پر ناکامی سے دو چار دکھائی دے رہی ہے ۔حکومت میں سٹرٹیجک پلاننگ کا فقدان ہے آرڈیننسوں کے ذریعے حکومتی معاملات چلانا مشکل ہوگا 18 ویں ترمیم کو ختم کرنے کی کوشش کے نتائج اچھے ثابت نہ ہونگے حکمران ٹولہ ملک و قوم کو مسائل سے نکالنے کی بجائے تنزلی کی گہرائیوں میں دھکیل رہا ہے وفاقی و صوبائی وزراء زہنی طور پر آج بھی ڈی چوک میں بیٹھے ہوئے ہیں نیب کے خود ساختہ ترجمانوں کی تعداد بڑھتی جارہی ہے تبدیلی کی آڑ میں عوام کو بیوقوف بنایا جا رہا ہے۔حکمران ٹولہ نے ملکی معیشت تباہ کرکے غریب عوام کو اجتماعی خودکشیوں اور انہیں زندہ درگور کرنے کی پالیسی اختیار کر رکھی ہے ۔جعلی مینڈیٹ کے ذریعے سلیکٹڈ حکومت دعووں کے باوجود عوام کو تاحال کوئی ریلیف فراہم کرنے میں ناکام رہے کشکول توڑنے کے جھوٹے دعویداروں نے قرض لیکر اپنی یوٹرن کی ہٹ دھرمی کو برقرار رکھا ۔بطور اپوزیشن پیپلزپارٹی عوام کے حقوق کیلئے ہر پلیٹ فارم پر آواز بلند کرئے گی تبدیلی سرکار اپنے دعووں اور وعدوں کے بوجھ ہی سے عوام میں جلد غیر مقبولہوتی جائے گی کھربوں روپے قرضہ لینے والا وزیراعظم قوم کو بتائے کہ کن شرائط پر قرضہ لے رہے ہیں کہیں وہ قوم اور ملک کے بڑئے اثاثے ریکوڈک کو کوڑیوں کے مول تو نہیں بیچ رہے اس حوالے سے پارلیمنٹ میں وضاحت کریں سیاستدانوں کا احتساب ہونا اچمبے کی بات نہیں یہ سلسلہ پرانا ہے پیپلزپارٹی کو اس سے کوئی خوف نہیں سابق صدر آصف علی زرداری کے کیس میں کچھ نہیں وہ بہت جلد باعزت بری ہونگے۔عمران کے سو روزہ پلان پر عملدرآمد ہوتا دکھائی نہیں دئے رہا پی ٹی آئی کی حکومت استحکام نہیں انتقام کی پالیسی پر گامزن ہے۔

پی پی رہنما

مزید : ملتان صفحہ آخر