ماہانہ گرانٹ بند ، میونسپل کمیٹیاں کروڑوں کی نادہند ہ ،صورتحال سنگین

ماہانہ گرانٹ بند ، میونسپل کمیٹیاں کروڑوں کی نادہند ہ ،صورتحال سنگین

میلسی(نمائندہ پاکستان)مسلم لیگ (ن) کی سابقہ صوبائی حکومت نے جنوبی پنجاب کی میونسپل کمیٹیوں کی ماہانہ ڈویلپمنٹ گرانٹ گذشتہ سال بند کی اور موجودہ صوبائی حکومت نے بھی میونسپل کمیٹیوں کی معاشی صورتحال کو نظر انداز کر دیا جس سے میونسپل کمیٹیاں کروڑوں روپے کی ڈیفالٹر ہو گئیں ۔تفصیل کیمطابق 2017ء میں مسلم لیگ(ن) کی صوبائی حکومت نے جنوبی پنجاب کی میونسپل کمیٹیوں کی ماہانہ ڈویلپمنٹ گرانٹ یہ کہتے ہوئے بند کر (بقیہ نمبر23صفحہ12پر )

دی کہ مذکورہ گرانٹ میں اضافہ کیا جارہا ہے اور حکومتی سطح پر فیصلہ ہونے کے بعد گرانٹ بحال کر دی جائیگی تا ہم (ن) لیگ کی حکومت نے جنوبی پنجاب کی میونسپل کمیٹیوں کی یہ گرانٹ مبینہ طور پر اورنج لائن ٹرین منصوبہ لاہور شفٹ کر دی جس سے میونسپل کمیٹیوں کا بجٹ اور ذرائع آمدن شدید متاثر ہوئے میونسپل کمیٹی میلسی کو ماہانہ 16لاکھ روپے سے زائد کی گرانٹ دی جا رہی تھی جو گذشتہ ایک سال سے بند ہے اور تقریباً دو کروڑ روپے صوبائی حکومت کی جانب واجب الاوصول ہیں اس دوران میونسپل کمیٹی میلسی نے گرانٹ ملنے کی امید پر شہر میں ایک کروڑ 68لاکھ روپے کی مختلف ترقیاتی سکیمیں شروع کرائیں جن میں سے کئی منصوبے مکمل ہو چکے ہیں جبکہ 68لاکھ روپے کی سکیمیں التواء کا شکار ہیں اور میونسپل کمیٹی ٹھیکیداروں کی تقریباً پونے دو کروڑ روپے کی ڈیفالٹر ہو چکی ہے اس سلسلے میں معلوم ہوا ہے کہ میونسپل کمیٹی میلسی کے اکاؤنٹ میں اس وقت محض 44ہزار روپے کی رقم موجود ہے جس سے پورے شہر کا نظام ابتری کا شکار ہے اور یہی صورتحال پورے جنوبی پنجاب میں ہے موجودہ صوبائی حکومت نے بھی اس اہم مسئلے کی جانب کوئی توجہ نہیں دی جس بناء پر موجودہ بلدیاتی ادارے اپنی افادیت کھو چکے ہیں شہریوں نے صوبائی وزیر بلدیات اور وزیر اعلیٰ پنجاب سے مطالبہ کیا ہے کہ جمہوریت کی نرسری کے حامل بلدیاتی اداروں کے منجمد کیئے گئے فنڈز فوری طور پر بحال کیئے جائیں ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر