سپریم کورٹ بار کے انتخابات کل ، صدارت کیلئے امان اللہ اور علی احمد کردمیں کانٹے دار مقابلہ متوقع

سپریم کورٹ بار کے انتخابات کل ، صدارت کیلئے امان اللہ اور علی احمد کردمیں ...

لاہور (نامہ نگار خصوصی) سپریم کورٹ بار کے سالانہ انتخابات کے لئے انتخابی مہم آخری مرحلہ میں داخل ہوگئی ہے کل 31 اکتوبر کو ہونے والے انتحابات میں صدارتی نشت پر پروفیشنل گروپ کے امان اللہ کنرانی جبکہ عاصمہ جہانگیر کے انڈیپنڈنٹ گروپ کی جانب سے علی احمد کرد میں کانٹے دار مقابلہ متوقع ہے سپریم کورٹ لاہور رجسٹری اور ہائیکورٹ کے باہر سڑکیں امیدواروں کی انتخابی بینرز سے سج گئیں صدارتی امیدواروں سمیت انتخاب میں حصہ لینے والے تمام امیدواروں کے الیکشن سرگرمیوں کا اہم مرکز لاہور بن گیا۔نائب صدر پنجاب کی سیٹ پر ملک کرامت اعوان اور طیب محمود جعفری آمنے سامنے ہیں ۔ سیکرٹری کے لئے شمیم الرحمان ملک اور عظمت اللہ چوہدری جب کہ فنانس سیکرٹری کے لئے علی احمد رانا اور محمود اے شیخ کے درمیان مقابلہ ہو گا سپریم کورٹ بار کے الیکشن کے لئے ملک بھر سے 3047 ووٹرز وکلاء اپناحق رائے استعمال کریں گے دیگر صوبوں کی نسبت پنجاب سے تعلق رکھنے والے والے ممبران کی تعداد سب سے زیادہ یعنی 2067 ہے ۔ ان میں سے بھی سب سے زیادہ وٹرز وکلاء کی تعداد لاہور سے ہے اور 1291 ہے ۔انتخاب کے حوالے سے چاروں صوبوں کی سپریم کورٹ رجسٹریوں ،اسلام آباد اور ہائی کورٹس کے علاقائی بنچوں میں پولنگ اسٹیشنز قائم کئے گئے ہیں سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں وائس چئیرمین بار کونسل پریذائیڈنگ آفیسر کے فرائض سرانجام دیں گے ۔اس سال دونوں صدارتی امیدواروں کا تعلق بلوچستان سے ہے ۔

سپریم کورٹ بار الیکشن

مزید : صفحہ آخر